سپین کے رافیل ندال ومبلڈن اوپن سے باہر ہو گئے

رافیل ندال تصویر کے کاپی رائٹ AFP

برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں جاری ومبلڈن اوپن میں جائلز مُلر نے رافیل ندال کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد شکست دے کر ایونٹ کا سب سے بڑا اپ سیٹ کردیا ہے۔

جائلز مُلر نے رافیل ندال کو چار گھنٹوں سے زیادہ جاری رہنے والے اس میچ میں 6-3، 6-4، 3-6، 4-6، اور 15-13 کے فرق سے شکست دی۔

رافیل ندال: 'کلے کورٹس کا بادشاہ'

راجر فیڈرر اور رافیل ندال آسٹریلین اوپن کے فائنل میں آمنے سامنے

فیڈرر نے ندال کو شکست دے کر آسٹریلین اوپن جیت لیا

لگزمبرگ سے تعلق رکھنے والے جائلز مُلر نے پہلے دو سیٹس میں کامیابی حاصل کی تاہم سپین کے رافیل ندال نے میچ میں واپسی کرتے ہوئے اگلے دونوں سیٹس جیت کر مقابلہ برابر کر دیا۔

34 سالہ جائلز مُلر رافیل ندال کو شکست دے کر کوارٹر فائنل میں پہنچ گئے ہیں جہاں ان کا مقابلہ کورشیا کے مارن سیلس سے ہو گا۔

جائلز مُلر جو سنہ 2008 کے بعد کسی گرینڈ سلیم کے کوارٹر فائنل میں پہنچے ہیں کا میچ جیتنے کے بعد کہنا تھا 'یہ بہت مشکل تھا۔ میں نے آخری دو میچ پوائنٹس میں 100 فیصد کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔'

سنہ 2008 اور 2010 میں ومبلڈن جیتنے والے رافیل ندال کا میچ کے بعد کہنا تھا 'یہ بہت ناقابل یقین مخالف کے خلاف میرا بہترین میچ نہیں تھا۔'

ان کا مذید کہنا تھا ' جائلز مُلر نے بہترین کھیل پیش کیا خاص طور پر پانچویں سیٹ میں لیکن میں نے آخری گیند تک مقابلہ کیا۔'

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں