ولادی میر کلچکو باکسنگ سے ریٹائر، اب جوشوا سے مقابلہ نہیں ہو گا

ولادی میر کلچکو

ایک عشرے تک عالمی ہیوی ویٹ چیمپیئن رہنے والے یوکرینی باکسر ولادی میر کلچکو نے باکسنگ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے۔

11 برس تک ناقابل شکست رہنے والے 41 سالہ ولادی میر کلچکو 29 اپریل کو لندن کے ویمبلی سٹیڈیم میں ہونے والے ایک انتہائی دلچسپ مقابلے میں نوجوان باکسر اینتھونی جوشوا سے ہار گئے تھے۔

اس میچ کو دیکھنےکے لیے 90 ہزار افراد سٹیڈیم میں موجود تھے۔

٭ اگر اب مقابلہ ہوا تو جوشوا سےہی ہو گا

٭ انتھونی جوشوا نے ورلڈ ہیوی ویٹ ٹائٹل جیت لیا

نوجوان جوشوا کو امید تھی کہ 11 نومبر کو لاس ویگاس میں متوقع مقابلے میں ان کا سامنا ایک بار پھر کلچکو سے ہو گا۔

خیال رہے کہ اینتھونی جوشوا سے شکست کے بعد سابق عالمی ہیوی ویٹ چیمپیئن کلچکو نے کہا تھا کہ اگر انھوں نے مستقبل میں کوئی مقابلہ کیا تو وہ اینتھونی جوشوا کےخلاف ہی ہو گا اور وہ اس کے علاوہ کسی دوسرے باکسر سے مقابلہ نہیں کریں گے۔

لیکن اب کلچکو کا کہنا ہے کہ ’میں نے وہ سب حاصل کر لیا ہے جس کے میں نے خواب دیکھ رکھے تھے، اور اب میں کھیل کے بعد اپنا دوسرا کریئر شروع کرنا چاہتا ہوں۔‘

دو مرتبہ چیمپیئن رہنے والے کلچکو نے اپنے باکسنگ کے کریئر کا اختتام 64 فتوحات اور پانچ شکستوں کے ساتھ کیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

ان کا مزید کہنا ہے کہ ’میں نے کبھی بھی ایسے طویل اور کامیاب کریئر کی توقع نہیں کی تھی۔‘

اپنے 52 حریفوں کو ناک آؤٹ کرنے والے کلچکو سے تمام بیلٹس 2015 میں اس وقت چھن گئی تھیں جب برطانوی باکسر ٹائسن فیوری نے جرمنی میں ہونے والے ایک میچ میں انھیں پوائنٹس پر شکست دی۔

اس کے علاوہ کلچکو نے صفر کے مقابلے میں 24 میچوں میں ناقابل شکست رہنے کا ریکارڈ بھی تو قائم کیا تھا، اور ان کا یہ ریکارڈ 1998 میں امریکی باکسر راس پیوریٹی کے خلاف شکست کے ساتھ ٹوٹ گیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption انتھونی جوشوا نے کلچکو کو 11ویں راونڈ میں ناک آؤٹ کر دیا تھا

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں