بابر اعظم: کیا وہ سب سے زیادہ مرتبہ صفر پر آؤٹ ہوئے؟

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

فٹ بال ممکنہ طور پر دنیا کا سب سے زیادہ پسند کیے جانے والا کھیل ہے لیکن دن بہ دن کرکٹ کے جنون اور دیوانوں میں بھی کافی اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

پورے سال میں کرکٹ کے بے تحاشہ میچ ہونے کے باوجود بھی اس کے ہر ریکارڈ اور اعداد و شمار پر شائقین مکمل طور پر نظر رکھتے ہیں۔

تو کرکٹ کی دنیا میں رواں سال یعنی 2017 کس ٹیم، بولر، بلے باز اور فیلڈر کے لیے کیسا رہا اور کھلاڑیوں کے اعداد و شمار کیسے رہے ہیں؟

یہ بھی پڑھیے

کرکٹ کی تاریخ کے یادگار چھکے

کرس گیل ابھی باقی ہے

بولنگ کا حساب دان حسن علی

بابر اعظم ٹیسٹ کرکٹ کیوں کھیلتے ہیں؟

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بابر اعظم چھ ٹیسٹ میچوں کی 12 اننگز میں پانچ مرتبہ صفر پر آؤٹ ہوئے

سب سے زیادہ صفر:

رواں سال دنیا بھر میں کھیلے جانے والے ٹسیٹ کرکٹ میچوں میں سب زیادہ صفر پر آؤٹ ہونے والے بلے بازوں میں سرفہرست سری لنکا کے نوان پردیپ ہیں جو چھ ٹیسٹ میچوں کی 12 اننگز میں سات مرتبہ صفر پر آؤٹ ہوئے۔

لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ اس فہرست میں دوسرے نمبر پر آنے والے بلے باز پاکستان کے بابر اعظم ہیں جن کا ون ڈے کرکٹ میں ریکارڈ انتہائی اچھا رہا ہے۔ بابر اعظم چھ ٹیسٹ میچوں کی 12 اننگز میں پانچ مرتبہ صفر پر آؤٹ ہوئے۔

اسی طرح ون ڈے کرکٹ کی بات کی جائے تو اس فہرست میں پہلے نمبر پر زمبابوے کے تینڈے چتارا موجود ہیں جو 12 میچوں میں پانچ اننگز کھیل کر تین میں صفر پر آؤٹ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سب سے بڑی فتوحات:

ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے بڑی فتح جنوبی افریقہ کے نام رہی جس نے انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ میچ میں 340 رنز سے فتح حاصل کی۔

ون ڈے کرکٹ میں نیوزی لینڈ نے ویسٹ انڈیز کو 204 رنز سے شکست دے کر مارجن کے لحاظ سے سال کی سب سے بڑی فتح حاصل کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سب سے زیادہ ایکسٹرا رنز کس نے دیے:

ٹیسٹ کرکٹ میچ کی ایک اننگز میں سب سے زیادہ ایکسٹرا رنز دینے والی ٹیموں میں سب سے پہلا نمبر پاکستان کا رہا جس نے ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلے گئے ٹیسٹ میچ کی ایک اننگز میں 44 ایکسٹرا دیے۔

ون ڈے کرکٹ کی بات کریں تو نیوزی لینڈ کی ٹیم آسٹریلیا کے خلاف کھیلے گئے میچ میں سب سے زیادہ 29 ایکسٹرا رنز دے کر سرفہرست ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سب سے زیادہ سینچریاں:

ایک روزہ میچوں میں سال 2017 میں سب سے زیادہ سینچریاں سکور کرنے والے بلے بازوں میں انڈیا کے روہت شرما پہلے اور وراٹ کوہلی دوسرے نمبر پر ہیں جب کہ دونوں ہی بلے باز چھ، چھ سینچریاں سکور کر چکے ہیں۔ تیسرے نمبر پر پاکستان کے بابر اعظم ہیں جنھوں نے چار سینچریاں بنائیں۔

ٹیسٹ کرکٹ میں وراٹ کوہلی اور آسٹریلیا کے کپتان سٹیو سمتھ نے سب سے زیادہ پانچ، پانچ سینچریاں سکور کیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption 2017 میں سب سے زیادہ سینچریاں سکور کرنے والے بلے بازوں میں انڈیا کے روہت شرما پہلے نمبر پر ہیں

سب سے زیادہ چھکے:

انڈین بلے باز روہت شرما جنھوں نے سال کے آخری دنوں میں سری لنکا کے خلاف ٹی 20 انٹرنیشنل میچوں میں تیز ترین سینچری کا ریکارڈ برابر کیا، سال 2017 میں 21 ون ڈے میچوں میں 46 اور انہی کے ہم وطن ہاردک پانڈیا نے 28 میچوں میں 30 چھکے لگائے۔

ٹیسٹ کرکٹ میں سال 2017 میں نیوزی لینڈ کے ڈی گرینڈ ہوم نے چھ میچوں میں 15 چھکے لگائے، ان کے بعد سب سے زیادہ 13 چھکے انڈیا کے رویندر جڈیجہ نے مارے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سب سے زیادہ وکٹیں:

سال 2017 میں اب تک کھیلے جانے والے ایک روزہ میچوں میں پاکستان کے حسن علی سب سے زیادہ وکٹیں لے کر سرفہرست ہیں۔ انھوں نے اس سال 18 ون ڈے میچوں میں 45 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ حسن علی ون ڈے میں سب سے زیادہ پانچ وکٹیں لینے والے بولر بھی ہیں، انھوں نے یہ کارنامہ تین مرتبہ سرانجام دیا۔

آسٹریلیا کے نیتھن لائن 11 ٹیسٹ میچوں میں 60 وکٹیں لے کر پہلے جبکہ انڈیا کے روی چندرن ایشون 11 ہی میچوں میں 56 وکٹیں لے کر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔ ٹیسٹ کرکٹ میں ایک اننگز میں سب سے زیادہ پانچ وکٹیں لینے والے بولر پاکستان کے یاسر شاہ ہیں جنھوں نے چھ میچوں میں پانچ مرتبہ ایسا کیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں