چیف کوچ وقار یونس نے استعفٰی دے دیا

Image caption استعفٰی کا فیصلہ ذاتی اور طبی وجوہات کی بناء پر کیا ہے: وقار یونس

پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف کوچ وقار یونس نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے تاہم وہ زمبابوے کےدورے میں پاکستان کی ٹیم کی کوچنگ کریں گے۔

وقار یونس نے ایک پریس کانفرنس میں استعفٰی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے یہ فیصلہ ذاتی اور طبی وجوہات کی بناء پر کیا ہے اور پاکستانی کرکٹ بورڈ سے ان کے کسی قسم کے کوئی اختلافات نہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے ان کا استعفی منظور کرلیا ہے۔

لاہور میں بی بی سی کی نامہ نگار مناء رانا کے مطابق پریس کانفرنس میں موجود صحافی ان کی یہ بات ہضم کرنے کو تیار نہیں تھے۔ انہوں نے متعدد سوالات کیے جن میں یہ جاننے کی کوشش کی گئی کہ وقار یونس کے اس استعفٰی کی وجہ کہیں بورڈ کے ساتھ معاملات کا بگڑنا تو نہیں تاہم وقار یونس کا کہنا تھا کہ وہ یہی کہیں گے کہ ان کے کسی سے کوئی اختلافات نہیں ہیں۔

وقار یونس کے مطابق انہوں نے استعفٰی دے کر ٹیم سے اور ملک سے کوئی ناانصافی نہیں کی اور کچھ ذاتی وجوہات اور کچھ طبی اسباب کی وجہ سے انہیں یہ فیصلہ کرنا پڑا۔

انہوں نے کہا کہ استعفٰی کا یہ معاملہ ان کے اور کرکٹ بورڈ کے درمیان ایک ہفتے سے چل رہا تھا اور کسی کو اس کا علم نہیں تھا اور جب انہوں نے ٹیم کے کھلاڑیوں کو پریس کانفرنس سے پہلے یہ بتایا تو انہیں بھی تھوڑا دھچکا لگا تھا لیکن کچھ وجوہات کی بنا پر وہ مجبور تھے۔

وقار یونس نے کہا کہ وہ اپنی کوچنگ سے مطمئن ہیں اور ان کے لیے قابل فخر بات یہ ہے کہ بے شمار تنازعات اور سپاٹ فکسنگ سکینڈل کے باوجود اسی ٹیم نے میدان میں ہر ٹیم کو ہرایا اور ورلڈ کپ کے سیمی فائنل تک پہنچی۔

یاد رہے کہ ورلڈ کپ کے سیمی فائنل تک پہنچنے والی ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی تھے جنہیں وقار یونس کے ساتھ اختلافات کے سبب ویسٹ انڈیز کے خلاف سیریز جیتنے کے باوجود کپتانی سے ہاتھ دھونا پڑے تھے۔

اسی بارے میں