نیتھن کی ڈیبو ٹیسٹ میں ریکارڈ کارکردگی

آسٹریلوی بولر نیتھن لیون تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ’یہ میری زندگی کے بہترین چند دنوں میں سے ہے‘

آسٹریلوی بولر نیتھن لیون اپنے پہلے ٹیسٹ میں پہلی ہی بال پر وکٹ حاصل کرنے والے دنیا کے چودہویں اور آسٹریلیا کے دوسرے بولر بن گئے ہیں۔

انہوں نے یہ اعزاز جمعرات کو سری لنکا کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کمارا سنگاکارا کو آؤٹ کر کے حاصل کیا۔

آف سپنر نیتھن نے اپنے پہلے ہی میچ میں تباہ کن بولنگ کرتے ہوئے چونتیس رنز کے عوض پانچ وکٹیں حاصل کیں اور اس عمدہ کارکردگی کی وجہ سے سری لنکن ٹیم اپنی پہلی اننگز میں صرف ایک سو پانچ رن ہی بنا سکی۔

ایک سال قبل تک آسٹریلیا کے شہر ایڈیلیڈ کے کرکٹ گراؤنڈ کے عملے کے رکن نیتھن کو دورۂ سری لنکا کے لیے پہلی مرتبہ آسٹریلوی ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

اس کارنامے پر تیئیس سالہ نیتھن کا کہنا تھا کہ ’میں یہ نہیں کہوں گا کہ وہ ایک بہترین گیند تھی۔ میرے خیال میں وہ ذرا باہر تھی لیکن میں اس کے نتیجے سے بہت خوش ہوں‘۔

انہوں نے کہا کہ ’ڈیبو پر پانچ وکٹیں لینا بہت ہی خاص ہے۔ یہ میری زندگی کے بہترین چند دنوں میں سے ہے اور یہ ہمیشہ میرے دل کے پاس رہے گا‘۔

وہ ایک سو سترہ برس کے وقفے کے بعد یہ کارنامہ سرانجام دینے والے آسٹریلوی کھلاڑی ہیں۔ ان سے پہلے سنہ 1894 میں آرتھر کنگھم نے انگلینڈ کے خلاف یہ اعزاز حاصل کیا تھا۔

خیال رہے کہ اب تک انگلینڈ کے سات، آسٹریلیا کے دو، جبکہ بھارت، سری لنکا، ویسٹ انڈیز، نیوزی لینڈ اور پاکستان کا ایک ایک کھلاڑی اپنی پہلی ٹیسٹ بال پر وکٹ لینے میں کامیاب ہوا ہے۔ پاکستان کی جانب سے یہ اعزاز سابق کپتان اور کوچ انتخاب عالم کو حاصل ہے۔

سری لنکا اور آسٹریلیا کے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کل سولہ وکٹیں گریں۔ سری لنکن ٹیم کو ایک سو پانچ رن پر آؤٹ کرنے سے آسٹریلیا کو پہلی اننگز میں ایک سو اڑسٹھ رن کی برتری ملی تاہم دوسری اننگز میں اس کے بلے باز بھی جم کر نہ کھیل سکے۔

جمعرات کو جب کھیل ختم ہوا تو آسٹریلیا نے اپنی دوسری اننگز میں ایک سو پندرہ رن بنائے تھے اور اس کے چھ کھلاڑی آؤٹ ہوئے تھے۔

اسی بارے میں