پاکستان کی پانچ رن سے فتح

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

پاکستان کی کرکٹ ٹیم نے زمبابوے کے خلاف بلاویو میں سیریز کے پہلے ایک روزہ میچ میں دلچسپ اور سخت مقابلے کے بعد پانچ رن سے شکست دے دی ہے۔

پاکستان نے زمبابوے کو میچ جیتنے کے لیے دو سو اڑتالیس رن کا ہدف دیا تھا جو زمبابوے کی ٹیم حاصل نہ کر سکی۔ زمبابوے نے سات وکٹوں کے نقصان پر مقررہ پچاس اوور میں دو سو بیالیس رن بنائے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

میچ کی تصاویر

پاکستان کی طرف اعزاز چیمہ نے دس اوور میں چھتیس رن دے کر تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ سہیل تنویر، سعید اجمل اور محمد حفیظ نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

زمبابوے کی طرف سے ٹیلر اور اوپنر سبندنا نے اچھی کارکردگی اور مظاہرہ کیا اور بالترتیب چوراسی اور تہتر رن سکور کیے۔

زمبابوے کی ٹیم کو اپنی آخری چار گیندوں پر دس رن درکار تھے اور پاکستان کی طرف سے نوجوان بالر جنید خان بالنگ کر رہے تھے۔

اس اوور میں زمبابوے کو کم از کم دو چوکے درکار تھے لیکن چیگمبورا کوئی شاٹ نہ لگا سکے۔ آخری اوور کی پانچویں گیند پر وہ رن آؤٹ ہو گئے اور یوں زمبابوے کی ٹیم پانچ رن سے شکست کھا گئی۔

پاکستان کی کرکٹ ٹیم نے اس میچ میں ٹاس جیتنے کے بعد پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن پاکستان کی اوپنگ اچھی نہیں رہی جس کی وجہ سے پوری ٹیم ابتداء سے ہی دباؤ کا شکار رہی اور تمام بلے باز انتہائی محتاط انداز اختیار کیے رہے۔

پاکستان کی طرف سے اننگز کا آغاز محمد حفیظ اور متعدد مرتبہ آزمائے گئے بلے باز عمران فرحت نے کیا۔

اس میچ کی خاص بات یہ تھی کہ دونوں ٹیموں میں تین تین آف سپنر شامل تھے اور کرکٹ کی تاریخ کا غالباً یہ پہلا میچ تھا جس میں بیک وقت چھ اسپنر کھلائے گئے۔ زمبابوے کی طرف سے والر، لیمب اور اٹسیہ جبکہ پاکستان کی طرف سے اجمل ، حفیظ اور شعیب ملک شامل تھے۔

پاکستان کی پہلے وکٹ تیسرے اوور کی پہلی گیند پر گری۔ تیسرے اوور میں عمران فرحت اس میچ میں ان کو کرائی گئی صرف دوسری گیند کا سامنا کرتے ہوئے ایک غلط شاٹ پر آؤٹ ہو گئے۔ مپوف کی گیند آف سٹمپ کے باہر تھی جو عمران فرحت کے بلے کا کنارے لیتے ہوئے تیبو کے ہاتھوں میں چلی گئی۔ عمران فرحت کوئی رن نہیں بنا پائے اور ان کا انفرادی سکور صفر رہا اور اس وقت پاکستان کا مجموعی سکور دو رن تھا۔

عمران فرحت کے علاوہ شعیب ملک کو بھی ایک طویل عرصے بعد ٹیم میں شامل کیا گیا لیکن وہ بھی بری طرح ناکام رہے۔شعیب ملک نے دو رن بنائے۔

پاکستان کی جانب سے سب سے کامیاب یونس خان رہے انہوں نے اٹہتر رن بنائے۔ جبکہ کپتان مصباح الحق نے بھی نصف سنچری سکور کی۔

اسی بارے میں