’کھیلنے سےانکار نہیں کیا‘

Image caption اگر میری چلی تو ٹویز دوبارہ مانچسٹر سٹی کے لیے نہیں کھیلیں گے: رابرٹو مینچینی

مانچسٹر سٹی کے کھلاڑی کارلوس ٹویز نےان الزامات کی تردید کی ہے کہ انہوں نے بائرن میونخ کے خلاف چیمپئنز لیگ کے میچ میں کوچ کے کہنے کے باوجود کھیلنے سے انکار کیا تھا۔

اس میچ میں بائرن میونخ نے مانچسٹر سٹی کو دوصفر سے ہرا دیا تھا۔ مینیجر رابرٹو مینچینی نے ہاف ٹائم کے بعد کارلوس ٹویز کو کھیلنے کے لیے کہا لیکن انہوں نے مبینہ طور پر کھیلنے سے انکار کر دیا۔

جس وقت کوچ نے ارجنٹائن سے تعلق رکھنے والے کارلوس ٹویز کو میدان میں اتارنے کی کوشش کی تو اس وقت بائرن میونخ کی ٹیم دوگول کی برتری حاصل کر چکی تھی جو آخری وقت تک برقرار رہی۔

کارلوس ٹویز نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ وہ تردید کرتے ہیں کہ انہوں نے ٹیم کے لیے کھیلنے سے انکار کیا لیکن انہوں نے کوچ مینچینی اور ان کے درمیان ہونے والی گفتگو کو منظر عام پر لانے سے انکار کیا۔ کارلوس ٹویز نے کہا:’ میرے اور کوچ کے مابین کیا بات چیت ہوئی ابھی اس کی تفصیلات میں جانے کی ضرورت نہیں ہے۔‘

کوچ رابرٹو مینچینی نے میچ میں شکست کے بعد کہا تھا کہ کارلوس ٹویز نے میدان میں جانےسے انکار کیا جس سے انہیں بہت مایوسی ہوئی۔

کوچ مینچینی نے کہا :’اگر میری چلی تو وہ (ٹویز) دوبارہ نہیں کھیلےگا۔ میر ے لیے وہ ختم ہو چکا ہے۔‘

کارلوس ٹویز مانچسٹر سٹی کے کنٹریکٹ کھلاڑی ہیں اور وہ کلب سے ماہانہ ایک ملین پونڈ تنخواہ وصول کرتے ہیں۔

کارلوس ٹویز نےکہا کہ وہ ٹیم کےلیے کھیلنے کے ہر وقت تیار ہیں اور وہ اپنے کنٹریکٹ کی پاسداری کریں گے۔

کارلوس ٹویز کچھ عرصے سے مانچسٹر سٹی چھوڑنے کی کوشش میں ہیں۔ مانچسٹر سٹی کلب کارلوس ٹویز کی خریداری کے لیے چالیس ملین پونڈ سے زیادہ رقم کا تقاضا کرتی رہا ہے۔کارلوس ٹویز کا کہنا ہے کہ انہیں انگلینڈ میں نہیں رہنا اور وہ اپنے بچوں کے قریب جانا چاہتے ہیں۔