’ہارون خان پاکستان کی نمائندگی کے اہل‘

Image caption ایونٹ میں سات یا آٹھ باکسرز بھیجے جائیں گے جن میں ہارون خان بھی شامل ہونگے: محمد اکرم

پاکستانی نژاد برطانوی باکسر ہارون خان آئندہ سال لندن اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کے اہل ہوں گے۔

ہارون خان عالمی لائٹ ویلٹرویٹ چیمپئن عامر خان کے بھائی ہیں اور گزشتہ سال کامن ویلتھ گیمز میں پاکستان کی طرف سے کھیلتے ہوئے کانسی کا تمغہ جیت چکے ہیں لیکن انٹرنیشنل باکسنگ ایسوسی ایشن (آئبا) نے گزشتہ دنوں پاکستان باکسنگ فیڈریشن کو کی گئی ای میل میں ہارون خان پر اعتراض کیا تھا کہ وہ پاکستان کی نمائندگی نہیں کر سکتے کیونکہ انہوں نے دو ہزار نو میں انگلینڈ کی نمائندگی کی تھی۔

پاکستان: باکسنگ میں دو تمغے یقینی

عالمی باکسنگ چیمپئن شپ کے سلسلے میں آذربائیجان میں موجود پاکستان باکسنگ فیڈریشن کے سیکریٹری محمد اکرم نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ مسئلہ حل ہوگیا ہے اور پاکستان باکسنگ فیڈریشن آئبا کو مطمئن کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے کہ جب معاملہ دوہری شہریت کا آتا ہے تو پھر آئبا کے قوانین واضح ہیں کہ باکسر اپنی پسند کے ملک کا انتخاب کر سکتا ہے اور ہارون خان نے پاکستان کی نمائندگی کو ترجیح دی ہے۔

محمد اکرم نے کہا کہ ہارون خان پر اعتراض انگلینڈ کی باکسنگ ایسوسی ایشن نے کیا تھا اور یہ اعتراض اس لیے سمجھ سے باہر ہے کیونکہ وہ پہلے ہی پاکستان کی طرف سے کامن ویلتھ گیمز میں شرکت کر چکے ہیں۔

ہارون خان کے والد شاہ خان نے بی بی سی کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ ایسا دکھائی دیتا ہے کہ کسی کی شکایت پر آئبا نے ہارون کو پاکستان کی طرف سے کھیلنے سے روکا کیونکہ ہوسکتا ہے کہ ان کا خیال ہو کہ ہارون خان پاکستانی پاسپورٹ ہوتے ہوئے دو ہزار نو میں انگلینڈ سے کھیلے اور اس کی وجہ سے وہ کسی دوسرے ملک کی تین سال تک نمائندگی نہیں کرسکتے تھے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ ہارون کو گزشتہ سال ہی پاکستان کا پاسپورٹ ملا اور اسی بنا پر وہ دوہری شہریت رکھتے ہیں اور انہیں یقین ہے کہ وہ لندن اولمپکس میں پاکستان ہی کی نمائندگی کرینگے۔

شاہ خان کا کہنا ہے کہ باکسنگ ہی نہیں ہر کھیل میں سیاست بہت زیادہ ہے۔ پسند ناپسند کی سوچ ہوتی ہے اس کے علاوہ قسمت کی بھی ضرورت ہوتی ہے

انہوں نے کہا کہ ہارون بھی اپنے بھائی عامر خان کی طرح بہت محنتی باکسر ہیں اور سخت ٹریننگ کرتے ہیں۔

پاکستانی باکسرز کے لیے لندن اولمپکس میں کوالیفائی کرنے کا آخری موقع آئندہ سال مارچ میں ملے گا جب وہ قازقستان میں ہونے والے کوالیفائنگ ٹورنامنٹ میں حصہ لیں گے۔

پاکستان باکسنگ فیڈریشن کے سیکریٹری محمد اکرم کے مطابق اس ایونٹ میں سات یا آٹھ باکسرز بھیجے جائیں گے جن میں ہارون خان بھی شامل ہونگے۔

اسی بارے میں