توفیق عمر کی ڈبل سنچری

توفیق عمر تصویر کے کاپی رائٹ Other
Image caption توفیق عمر نے عمدہ بلے بازی کا مظاہرہ کیا ہے

ابوظہبی میں سری لنکا کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کے کھیل کے اختتام پر سری لنکا نے اپنی دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر سینتالیس رنز بنائے ہیں اور اسے پاکستان کی برتری ختم کرنے کے لیے مزید دو سو سڑسٹھ رنز درکار ہیں۔

اس سے قبل پاکستان نے اپنی پہلی اننگز چھ وکٹوں کے نقصان پر پانچ سو گیارہ رن بنا کر ڈیکلیئر کر دی تھی۔

تفصیلی سکور کارڈ

پاکستانی اننگز کی خاص بات اوپنر توفیق عمر کی ڈبل سنچری تھی۔ وہ دو سو چھتیس رن بنا کر رن آؤٹ ہوئے۔ یہ انیس سال بعد کسی پاکستانی اوپنر کی ڈبل سنچری ہے۔

توفیق عمر کے علاوہ پاکستانی بلے بازوں محمد حفیظ اور اظہر علی نے بھی نصف سنچریاں سکور کیں۔ حفیظ پچھہتر اور اظہر علی ستّر رن بنا کر پویلین لوٹے۔

سری لنکا کی جانب سے ہیراتھ نے تین جبکہ ولیگیدرا نے دو وکٹیں حاصل کیں۔

تیسرے دن آخری سیشن میں جب سری لنکا نے اپنی دوسری اننگز شروع کی تو اسے پہلے ہی اوور میں اس وقت نقصان اٹھانا پڑا جب عمر گل نے اوپنر پرنویتانا کو ایل بی ڈبلیو کر دیا۔

تاہم اس نقصان کے بعد تھریمان اور سنگاکارا نے ذمہ دارانہ انداز میں بلے بازی کی اور کھیل کے اختتام تک سری لنکا کو مزید نقصان سے محفوظ رکھا۔

اسی بارے میں