انڈین بیٹنگ ایک مرتبہ پھر ناکام

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption ڈیوڈ وارنر نے وکٹ کے چاروں جانب دلکش سٹروک کھیلے

پرتھ میں تیسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں بھارتی بلے بازوں کی مایوس کن کارکردگی کے برعکس آسٹریلوی بلے بازوں نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔

آسٹریلوی اوپنر ڈیوڈ وارنر نےصرف انہترگیندوں پر تیرہ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے سنچری بنائی۔ ٹیسٹ کرکٹ میں کسی بھی بیٹسمین کی چوتھی تیز ترین سنچری ہے۔

آسٹریلیا نے جمعہ کو ٹاس جیت کر بھارت کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تو بھارتی بیٹنگ ایک مرتبہ پھر ناکام رہی اور پوری ٹیم صرف ایک سو اکسٹھ رن بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اس کے جواب میں آسٹریلوی اوپنرز ڈیوڈ وارنر اور ای کوون نے اپنی ٹیم کو ایک مضبوط آغاز فراہم کیا اور ایک سو انچاس رنز کی ناقابلِ شکست شراکت قائم کی ہے۔

جب پہلے دن کا کھیل ختم ہوا تو وارنر ایک سو چار اور کوون چالیس رنز پر ناٹ آؤٹ تھے۔

اس سے قبل بھارت کی جانب سے ویرات کوہلی کے علاوہ کوئی بھی بلے باز وکٹ پر نہ ٹہر سکا۔ بھارت کو پہلا نقصان صرف چار کے مجموعی سکور پر اٹھانا پڑا جب وریندر سہواگ بغیر کوئی رن بنائے پویلین لوٹ گئے۔

سچن تندولکر کی سوویں سنچری کا خواب ایک مرتبہ پھر ادھورا ہی رہا اور وہ صرف پندرہ رن بنا سکے۔ ان کے علاوہ گوتم گمبھیر اور لکشمن نے اکتیس اکتیس رنز کی اننگز کھیلیں۔

ایک موقع پر چونسٹھ کے سکور پر بھارت کی چار وکٹیں گر چکی تھیں تاہم اس موقع پر ویرات کوہلی نے چوالیس رنز کی اہم اننگز کھیل کر اپنی ٹیم کو سہارا دیا۔

بعد میں آنے والے بلے بازوں میں سے بھی کوئی آسٹریلوی بولرز کا سامنا نہ کر سکا اور پوری ٹیم کھیل کے تیسرے سیشن میں 161 رن پر آؤٹ ہوگئی۔

آسٹریلیا کی جانب سے ہلفنہاؤس نے چار، پیٹر سڈل نے تین، سٹارک نے دو جبکہ ہیرس نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

چار میچوں کی اس ٹیسٹ سیریز میں آسٹریلیا کو بھارت پر دو صفر کی ناقابلِ شکست برتری حاصل ہے۔ انڈیا اس میچ میں چار فاسٹ بولروں کے ساتھ کھیل رہا ہے۔

اسی بارے میں