دبئی: انگلینڈ پر چھیانوے رنز کی برتری حاصل

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption حفیظ نے گیارہ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے اٹھاسی رنز بنائے

دبئی میں جاری پہلے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن پاکستانی بیٹسمین بولرز کی محنت کا پوری طرح فائدہ نہیں اٹھا سکے۔

مڈل آرڈر بیٹسمینوں کی ناکامی کے بعد پاکستان نے دبئی ٹیسٹ کے دوسرے دن کا اختتام دو سو اٹھاسی رنز سات کھلاڑی آؤٹ پر کیا اس طرح اس کی برتری چھیانوے رنز کی ہوگئی ہے۔

انگلینڈ کی ٹیم پہلی اننگز میں192 رنز بناکر آؤٹ ہوئی تھی۔وکٹ کیپر عدنان اکمل 24 رنز پر ناٹ آؤٹ تھے۔

دبئی ٹیسٹ کا تفصیلی سکور کارڈ

اوپنرز محمد حفیظ اور توفیق عمر نے ایک سو چودہ رنز کے ذریعے ایک مضبوط بنیاد فراہم کی لیکن مڈل آرڈر بیٹسمین ٹیم کی پوزیشن مستحکم کرنے میں کامیاب نہ ہو سکے۔

دونوں اوپنرز کی یہ پانچویں سنچری اوپننگ شراکت تھی جو ٹیسٹ کرکٹ میں پاکستان کا نیا ریکارڈ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اوپنرز محمد حفیظ اور توفیق عمر نے ایک سو چودہ رنز کے ذریعے ایک مضبوط بنیاد فراہم کی

سٹورٹ براڈ توفیق عمر اور اظہر علی کو آؤٹ کر کے اپنے کپتان کے چہرے پر مسکراہٹ لے آئے جو ناکام بیٹنگ کے بعد وکٹ ہاتھ نہ آنے پر پریشان ہو چلے تھے اور یہ پریشانی اس وقت بڑھ گئی تھی جب براڈ کی گیند پر ٹریملیٹ نے محمد حفیظ کا کیچ گرا دیا تاہم اگلی ہی گیند پر جو بالکل سیدھی تھی توفیق عمر لائن میں نہ آ سکے اور بولڈ ہوگئے۔

توفیق نے اٹھاون رنز سکور کیے جو انگلینڈ کے خلاف ان کی پہلی نصف سنچری تھی۔

اظہر علی آٹھ گیندوں کے مہمان ثابت ہوئے اور صرف ایک رن بنا کر براڈ کی گیند پر وکٹ کیپر پرائر کو کیچ تھما گئے۔

محمد حفیظ کی وکٹ انگلینڈ کو بالآخر گریم سوآن کے ذریعے مل گئی جو اٹھاسی رنز بناکر سوئپ کرنے کی کوشش میں ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

تجربہ کار یونس خان پارٹ ٹائم بولر جوناتھن ٹراٹ کے پہلے ہی اوور میں سنتیس رنز پر ایل بی ڈبلیو ہوئے تو پاکستان کا سکور دو سو دو رنز تھا اور ایک بڑی برتری کے لیے وہ کسی بڑی اننگز کی منتظر تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption محمد حفیظ کی وکٹ انگلینڈ کو بالآخر گریم سوآن کے ذریعے مل گئی

جیمز اینڈرسن نے 231 اسکور پر دوسری نئی گیند لی اور اسد شفیق کو سولہ کےانفرادی سکور پر وکٹ کیپر پرائر کے ہاتھوں کیچ کرادیا جس کے بعد مصباح الحق اور عدنان اکمل نے ذمہ داری سے کھیلتے ہوئے52 رنز کی شراکت قائم کی لیکن کھیل کے آخری لمحات میں مصباح الحق باون رنز بنا کر سوآن کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔

مصباح الحق کی یہ پندرہویں اور بحیثیت کپتان گیارہویں نصف سنچری تھی۔اس اننگز کے دوران انہوں نےٹیسٹ کرکٹ میں دو ہزار رنز بھی مکمل کر لیے۔

دن کے آخری اوور میں اینڈرسن نے عبدالرحمن کو چار رنز پر بولڈ کر دیا۔

سٹورٹ براڈ جیمز اینڈرسن اور گریم سوآن نے دو دو وکٹیں حاصل کیں۔ٹراٹ نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اسی بارے میں