عبدالرحمٰن سے کہا دس وکٹیں لینے دو: اجمل

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

انگلینڈ کے خلاف دبئی ٹیسٹ میں دس وکٹوں کی میچ وننگ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے آف سپنر سعید اجمل میدان میں اپنے ساتھیوں کے درمیان زندہ دل مشہور ہیں اور جب وہ میدان سے باہر میڈیا کے سامنے ہوتے ہیں تب بھی ان کی بذلہ سنجی زوروں پر ہوتی ہے۔

دبئی ٹیسٹ کے پہلے دن جب ان کی سات وکٹوں کی شاندار کارکردگی کو بولنگ ایکشن پر اعتراضات کے ذریعے زائل کرنے کی کوشش کی گئی اس وقت بھی وہ جذباتی نہیں ہوئے اور ہنستے مسکراتے انگلش میڈیا کے ہر تند و تیز سوال کا جواب دے گئے اور جب تیسرے دن میچ میں دس وکٹوں پر مین آف دی میچ ایوارڈ لے کر وہ دوبارہ پریس کانفرنس میں آئے تب بھی ان کی گفتگو قہقہے بکھیر رہی تھی۔

سعید اجمل نے دلچسپ انکشاف کیا کہ جب وہ اپنی دسویں وکٹ کے لیے کوشش کررہے تھے عمرگل اپنی پانچویں وکٹ کی تلاش میں تھے ایسے میں انہوں نے لیفٹ آرم سپنر عبدالرحمٰن سے درخواست کی کہ وہ انہیں اس کا موقع دے دیں تاکہ وہ میچ میں دس وکٹیں مکمل کرسکیں۔

اس موقع پر کپتان مصباح الحق نے عبدالرحمٰن کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے سپورٹس مین سپرٹ کا مظاہرہ کرتے ہوئے انہیں کہا کہ وہ سعید اجمل کو بولنگ کرانے دیں۔

سعید اجمل نے اپنے ٹیسٹ کریئر میں دوسری مرتبہ ٹیسٹ میچ میں دس وکٹیں حاصل کی ہیں۔ اس سے قبل انہوں نے گزشتہ سال ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ میں گیارہ وکٹیں حاصل کی تھیں۔

سعید اجمل نے بعد ازاں بی بی سی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ انہیں دونوں اننگز میں ای این بیل کو آؤٹ کر کے خوشی ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ انگلینڈ کے دورے میں جو حالات پیدا ہوئے تھے اس کے بعد نہ صرف وہ بلکہ ہر کھلاڑی پرجوش تھا کہ انگلینڈ کو کارکردگی سے جواب دیا جائے۔

اس سوال پر کہ کیا انگلینڈ کے بیٹسمین آپ کی نئی پراسرار گیند کا انتظار ہی کرتے رہ گئے ؟ سعید اجمل نے کہا کہ وہ اپنا کام تو دکھاگئے ان کے پاس ورائٹی موجود ہے اور وہ اپنی نئی گیند پر مہارت حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

سعید اجمل نے کہا کہ انہیں اس میچ میں بولنگ کے دوران کبھی بھی اپنے ایکشن کے بارے میں پریشانی نہیں ہوئی اور وہ مکمل طور پر اپنی بولنگ پر توجہ رکھے ہوئے تھے۔

سعید اجمل اٹھارہ ٹیسٹ میچوں میں ترانوے وکٹیں حاصل کرچکے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ وہ سو وکٹوں کے سنگ میل تک پہنچنے کے لئے پرجوش ہیں۔

اسی بارے میں