عارف حسن پی او اے کے صدر منتخب

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدارتی انتخاب میں لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عارف حسن نے کامیابی حاصل کی ہے۔

سنیچر کو لاہور میں ہونے والے الیکشن میں وہ اگلے چار سال کے لیے ایسوسی ایشن کے صدر منتخب ہوئے ہیں۔

یہ پہلی مرتبہ ہے کہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر کے لیے انتخابات کرائے گئے کیونکہ اس سے قبل پاکستان بھر میں کھیلوں کی ایسوسی ایشنز متفقہ طور پر ایک نام کا انتخاب کرتی تھیں اور لیفٹیننٹ جنرل (ر) عارف حسن دو مرتبہ اسی طرح صدر منتخب ہو چکے ہیں۔

تاہم اس مرتبہ انہیں اس عہدے کے لیے دو امیدواروں پاکستان ایتھلیٹکس فیڈریشن کے صدر میجر جنرل ریٹائرڈ اکرم ساہی اور پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر قاسم ضیاء سے مقابلہ کرنا پڑا۔

تیسری مدت کے لیے صدر منتخب ہونے والے عارف حسن نے پریس کانفرنس میں کہا کہ انہوں نے پاکستان میں کھیلوں کے لیے پہلے بھی بہت کچھ کیا ہے لیکن کچھ خامیاں رہتی ہیں اور ان کی کوشش ہو گی کہ وہ خامیاں دور کی جائیں۔

پی او اے کے صدر نے کہا کہ انتخابات ختم ہونے کے ساتھ تمام گروہ بندیاں بھی ختم ہوگئیں ہیں اور اب سب ایک سپورٹس خاندان کے رکن ہیں۔ وہ سب ہی کو ساتھ لے کر چلیں گے اور سب مل کر پاکستان میں کھیلوں کی بہتری کے لیے کام کریں گے۔

انہوں نے پاکستان ایتھلیٹکس فیڈریشن کے سیکرٹری خالد محمود کو پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کا سیکرٹری مقرر کرنے کا اعلان بھی کیا۔

انتخابات کے بعد قاسم ضیاء تو میڈیا سے بات کیے بغیر چلے گئے البتہ دوسرے نمبر پر رہنے والے امیدوار میجر جنرل ریٹائرڈ اکرم ساہی نے کہا کہ وہ نئے صدر کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ہمیشہ کھیلوں کی بہتری کے لیے پی او اے کے صدر کی حمایت کریں گے۔