سچن کے کارنامے پر کھلاڑیوں کے تاثرات

تصویر کے کاپی رائٹ AP

بھارت کے مایہ ناز بلے باز سچن تندولکر کرکٹ کی تاریخ میں سنچریوں کی سنچری بنانے والے پہلے کھلاڑی بن گئے ہیں۔

’لٹل ماسٹر‘کے نام سے جانے والے تندولکر نے سنہ انیس سو نوے میں سترہ سال کی عمر میں انگلینڈ کے خلاف پہلی سنچری بنائی۔

تندولکر نے بنگلہ دیش میں جاری ایشیا کپ کے ایک میچ میں میزبان ملک کے خلاف سنچری بنائی جو ان کے کیرئیر کی سویں سنچری تھی۔

وہ اپنے کیرئیر میں اب تک اکاون ٹیسٹ سنچریاں اور انچاس ایک روزہ سنچریاں بنا چکے ہیں۔

سچن تندولکر کے اس منفرد کارنامے پر ان کے ساتھی اور مخالفین نے اپنی رائے کا اظہار کچھ یوں کیا۔

انگلش ٹیم کے موجودہ کپتان اینڈریو سٹراس

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

انگلینڈ کی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے موجودہ کپتان اینڈریو سٹراس نے سچن تندولکر کے اس کارنامے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ’یہ ایک عظیم کھلاڑی کا عظیم کارنامہ ہے۔‘

انہوں نے مزید کہا کہ سچن ایسے کھلاڑی ہیں جو گزشتہ دس سے پندرہ سال کے دوران دوسرے کھلاڑیوں کے لیے ایک مثال ہیں۔

سٹراس کے مطابق بِلاشبہ یہ ایک بہت بڑی کامیابی ہے اور مستقبل میں شاید ہی کوئی دوسرا کرکٹر ایسا کارنامہ سرانجام دے سکے۔

انگلینڈ کی ٹیم کے کپتان کا کہنا ہے کہ سچن کی تکنیک اور صلاحیت بہت منفرد ہے اور میں نے ان کے خلاف کھیلتے ہوئے ان کی بیٹنگ سے محظوظ ہوئے ہیں۔

انگلینڈ کی ون ڈے ٹیم کےموجودہ کپتان ایلسٹر کک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

انگلینڈ کی ایک روزہ کرکٹ ٹیم کے موجودہ کپتان ایلسٹر کک کا کہنا ہے کہ یہ ایک ناقابلِ یقین کارنامہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ بہت کم کھلاڑیوں نے فرسٹ کلاس کرکٹ میں سو سنچریاں بنائی ہیں تاہم بین الاقوامی سطح اور دباؤ میں ایسا کارنامہ سرانجام دینا واقعی بہت بڑی کامیابی ہے۔ سچن تندولکر حقیقت میں ایک عظیم کھلاڑی ہیں۔

ایلسٹر کک کے مطابق سو سنچریاں بنانے کے لیے آپ کو ناقابلِ یقین کھلاڑی بننا پڑتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا ’ کرکٹ میں ریکارڈ ٹوٹنے کے لیے ہی بنتے ہیں اور میرے خیال میں مستقبل میں بین الاقوامی کرکٹ میں شاید ہی کوئی کھلاڑی سو سنچریاں بنا سکے گا۔

بھارت کے سابق کپتان سوروو گنگولی

بھارت کے سابق کپتان سوروو گنگولی نے سچن تندولکر کے اس کارنامے کے بارے میں کہا کہ وہ بہت عظیم کھلاڑی ہیں۔ ان کے ریکارڈ سب کچھ بتاتے ہیں۔

میرے خیال کے مطابق سچن تندولکر سب سے شاندار کھلاڑی ہیں۔ میں نے بریڈ مین کو کبھی نہیں دیکھا تاہم وہ دنیا کے تمام کرکٹروں کے مقابلے میں بہترین ہیں۔

سوروو گنگولی نے کہا کہ تندولکر نے ہمیشہ اپنے کھیل اور رنز بنانے پر اپنی توجہ مرکوز رکھی۔

گنگولی کا کہنا تھا کہ ان کے خیال میں سچن جب تک رنز بناتے رہیں انہیں بھارت کے لیے کھیلتے رہنا چاہیے اور میرے خیال میں اس کے لیے عمر کی کوئی قید نہیں ہونی چاہیے۔

انگلینڈ کے سابق کپتان مائیکل وان

انگلینڈ کے سابق کپتان مائیکل وان کے مطابق تندولکر کو بیٹنگ کرتے ہوئے دیکھنا بہت اچھا لگتا ہے۔ کرکٹ کی دنیا میں ایسے بہت ہی کم کھلاڑی ہیں جو گیند کو اتنے زور سے ہٹ کرتے ہیں جتنا کہ تندولکر۔

انہوں نے کہا کہ تندولکر ممبئی کی گلیوں میں آزادانہ گھوم نہیں سکتے، وہ ریستورانوں میں آسانی سے نہیں جا سکتے اور میرے خیال میں یہی وجہ ہے کہ تندولکر اپنا زیادہ وقت لندن میں گزارتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ تندولکر متحمل مزاج انسان ہیں، ان کے ساتھ بات کر کے خوشی محسوس ہوتی ہے، وہ ہمیشہ سے کرکٹ سے پیار کرتے ہیں اور کرکٹ ہی سے توانائی حاصل کرتے ہیں۔

آسٹریلیا کے سابق کپتان سٹیو واہ

تصویر کے کاپی رائٹ AP

آسٹریلیا کے سابق کپتان سٹیو واہ کا کہنا ہے کہ کرکٹ کی دنیا میں اس سوال کا جواب دینا بہت ہی مشکل ہے کہ سر ویون رچررڈز اور جاوید میاں داد میں سے کون بہترین کھلاڑی ہے اور یہی صورتِ حال برائن لارا اور سچن تندولکر کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ تندولکر نے اپنے ملک کے لیے ہمیشہ دباؤ میں بہترین کھیل پیش کیا۔

سٹیو واہ کے مطابق جہاں تک تندولکر اور لارا کا تعلق ہے تو میں لارا کو تندولکر پر فوقیت دوں گا۔

سابق آسٹریلوی کپتان نے کہا کہ برائن لارا جب اپنی بہترین فارم میں تھے تو جو چاہتے تھے کر لیتے تھے اور انہیں آؤٹ کرنا تقریباً نا ممکن ہوتا تھا۔

اسی بارے میں