سری لنکا کی پاکستان کی میزبانی سے معذرت

سری لنکن کرکٹ بورڈ نے پاکستان کی آسٹریلیا کے خلاف اس سال اگست کے وسط میں ہونے والی ہوم سیریز کی میزبابی کرنے سے معذرت کرلی ہے ۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے اس فیصلے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

اس سیزیر کے دوران پاکستان اور آسٹریلیا کے خلاف پانچ ون ّڈے اور تین ٹی ٹوئنٹی میچرز کھلیے جانے تھے تاہم ابھی حتمی تاریخوں کا اعلان نہیں کیا گیا تھا۔

سری لنکن کرکٹ بور ڈ کے مطابق انہوں نے یہ معذرت اس لیے کی ہے کیونکہ بورڈ نے اس سال اگست میں اپنی پریئمیر لیگ کا انعقاد کرنا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے عہدیدار سبحان احمد نے کہا کہ سری لنکن کرکٹ بورڈ نے اس سیریز کی میربانی کی پیشکش کی تھی اور اسی وجہ سے پاکستانی کرکٹ بورڈ نے دیگر ممالک کےساتھ اس سیریز کے انقعاد کے لیے بات چیت نہیں کی۔

اس سے پہلے بنگلہ دیشں کرکٹ بورڈ نےگزشتہ ماہ پاکستان آکر کرکٹ کھیلنے کی دعوت قبول کی تھی تاہم ڈھاکہ ہائی کورٹ کے احکامات پر بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم نے اپنا دورہ پاکستان منسوخ کر دیا تھا۔

بورڈ کے عہدیدار سبحان احمد نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ سری لنکن کرکٹ بورڈ کی طرف سے انکار کے بعد پاکستان کی آسڑیلیا کے ساتھ سیریز کے انقعاد کے لیے متحدہ عرب امارت اور ملیشیا کے ساتھ گفتگو کی جا رہی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے عہدیدار نے اس امید کا اظہار کیا کہ آسٹریلیا کے خلاف سیریز کی میزبانی کے لیے نئے مقام کی تلاش کی جا رہی ہے اور بہت جلد اس کا فیصلہ ہو جائےگا۔

مارچ دو ہزار نو میں لاہور میں سری لنکن ٹیم پر ہونے والے حملے کے بعد سے پاکستان میں کوئی بین الاقوامی کرکٹ ٹیم کھیلنے کے لیے نہیں آئی۔

اس حملے میں سری لنکن ٹیم کے اسسٹنٹ کوچ سمیت سات کھلاڑی زخمی ہوگئے تھے۔ اس واقعے کے بعد سے پاکستان نے متحدہ عرب امارت ، برطانیہ اور نیوزی لینڈ کا ہوم سیریز کے لیے انتخاب کیا۔

آسٹریلیا کی کرکٹ ٹیم نے سنہ انیس سو اٹھانوے سے پاکستان کا کوئی دورہ نہیں کیا اور ان کا یہ موقف رہا ہے کہ ان کی پاکستان کے ساتھ ہوم سیریز سری لنکا، متحدہ عرب امارات یا پھر برطانیہ میں کرائی جائیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے عہدیدار سبحان احمد کا کہنا ہے کہ سری لنکا میں ہونے والی پریئمیر لیگ کے انقعاد کے بعد یہ ممکن ہے کہ وہاں پر پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان ہوم سیزیز کرائی جا سکے کیونکہ بقول ان کے پریئمیر لیگ کے بعد ٹی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے انقعاد کی تیاریاں شروع ہوجائیں گے جو اٹھارہ ستمبر سے آٹھ اکتوبر تک جاری رہے گا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے عہدیدار نے اس تاثر کی نفی کی کہ پاکستان بورڈ اس وقت تنہا رہ گیا ہے ۔ بورڈ کے عہدیدار سبحان احمد کے بقول اس بات کو تسلیم نہیں کیا جا سکتا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اس وقت تنہائی کا شکار ہے کیونکہ بقول ان کے دیگر ممالک پاکستان کی ہوم سیریز کے انقعاد کے لیے تیار ہیں۔