دوحہ،باکو اولمپکس میزبانی کی دوڑ سے باہر

تصویر کے کاپی رائٹ IOC
Image caption میڈرڈ نے میزبانی کے لیے لگاتار تیسری مرتبہ درخواست دی ہے

قطر کا دارالحکومت دوحہ اور آذربائیجان کا صدر مقام باکو سنہ 2020 کے اولمپکس کی میزبانی کی دوڑ سے باہر ہوگئے ہیں۔

اب ان مقابلوں کی میزبانی کے لیے استنبول، ٹوکیو اور میڈرڈ کے مابین مقابلہ ہوگا۔

دوحہ اور باکو کی ممکنہ میزبان شہروں کی فہرست سے علیحدگی کا فیصلہ بدھ کو کیوبک میں بین الاقوامی اولمپک کمیٹی کے ایگزیکٹو اجلاس میں کیا گیا۔

یہ لگاتار دوسرا موقع ہے کہ دوحہ اور باکو حتمی فہرست میں جگہ نہیں بنا سکے۔ اس سے قبل ان دونوں شہروں نے دو ہزار سولہ کے اولمپکس کی میزبانی کے لیے بھی کوشش کی تھی اور ناکام رہے تھے۔

اس فیصلے کے بعد باقی رہ جانے والے تینوں ممالک ترکی، جاپان اور سپین اپنے اپنے شہروں کے لیے لابیئنگ کریں گے اور دو ہزار بیس کے اولمپکس کے میزبان کا اعلان سات ستمبر دو ہزار چودہ کو ارجنٹائن کے شہر بیونس آئرس میں ہوگا۔

بین الاقوامی اولمپک کمیٹی کے پندرہ رکنی ایگزیکٹو بورڈ نے حتمی فہرست کا انتخاب اولمپکس ماہرین کے تکنیکی جائزے کی رپورٹ کے جائزے کے بعد کیا۔

جاپانی شہر ٹوکیو ماضی میں سنہ انیس سو چونسٹھ کے اولمپکس کی میزبانی کر چکا ہے تاہم استنبول اور میڈرڈ میں آج تک اولمپکس مقابلے منعقد نہیں ہوئے ہیں۔

میڈرڈ نے میزبانی کے لیے لگاتار تیسری مرتبہ درخواست دی ہے جبکہ ٹوکیو کے لیے یہ دوسرا موقع ہے جبکہ استنبول مجموعی طور پر پانچویں مرتبہ میزبانی لینے کی کوشش کر رہا ہے۔

دوحہ نے گرم موسم کی وجہ سے دو ہزار بیس کے اولمپکس جولائی اگست کی بجائے اکتوبر میں کروانے کی پیشکش کی تھی۔ خیال رہے کہ دوحہ میں دو ہزار بائیس کا فٹبال ورلڈ کپ بھی منعقد ہوگا۔

خیال رہے کہ دو ہزار بارہ کے اولمپکس لندن جبکہ دو ہزار سولہ کے برازیلی شہر ریو ڈی جنیرو میں منعقد ہونا ہیں۔

اسی بارے میں