پاکستان کو جیت کے لیے پانچ سو دس رنز کا ہدف

تصویر کے کاپی رائٹ Other
Image caption سری لنکن بلے بازوں نے پاکستانی بولرز کو سنبھلنے کا کوئی موقع نہیں دیا

سری لنکا کے شہر گال میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن سری لنکن ٹیم کی پوزیشن نہایت مضبوط ہے اور اس نے پاکستان کو جیت کے لیے پانچ سو دس رنز کا ہدف دیا ہے۔

پہلی اننگز میں پاکستان پر تین سو بہتّر رنز کی سبقت حاصل کرنے کے بعد دوسری اننگز میں سری لنکن بلے بازوں تلکارتنے دلشان اور پرناویتانا نے پراعتماد انداز میں کھیلتے ہوئے سری لنکا کی برتری میں مزید پچاسی رنز کا اضافہ کیا۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

دوسری اننگز میں پاکستان کو پہلی کامیابی سعید اجمل نے پرناویتانا اور دوسری جنید خان نے دلشان کو آؤٹ کر کے دلوائی۔ پرناویتانا نے پچیس جبکہ دلشان نے چھپن رنز بنائے۔

پاکستان کو تیسری کامیابی چائے کے وقفے سے پہلے ملی جب پہلی اننگز میں ایک سو ننانوے رنز کی شاندار اننگز کھیلنے والے کمارا سنگاکارا صرف ایک رن بنا کر سعید اجمل کی دوسری وکٹ بنے۔

اس سے قبل تیسرے دن کھانے کے وقفے سے قبل پاکستان کی پوری ٹیم اپنی پہلی اننگز میں ایک سو رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔ تاہم میزبان ٹیم نے پاکستان کو فالو آن پر مجبور نہ کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے خود کھیلنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ ٹیسٹ کرکٹ میں سری لنکا کے خلاف پاکستان کا دوسرا سب سے کم مجموعہ ہے اور آٹھ پاکستانی بلے بازوں کا سکور دوہرے ہندسوں میں بھی داخل نہ ہو سکا۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption ہیراتھ نے یونس خان کی اہم وکٹ بھی حاصل کی

تیسرے دن جب کھیل شروع ہوا تو یونس خان اور اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے محمد ایوب ڈوگر نے اڑتالیس رنز پانچ کھلاڑی آؤٹ کے سکور سے اننگز دوبارہ شروع کی۔

پاکستان کو چھٹا نقصان پینسٹھ کے مجموعی سکور پر یونس خان کی وکٹ کی صورت میں اٹھانا پڑا جنہیں ہیراتھ نے انتیس کے انفرادی سکور پر ایل بی ڈبلیو کر دیا۔

بعد میں آنے والے پاکستانی بلے باز ابتدائی بلے بازوں کی طرح ناکام رہے اور پوری ٹیم پچپن ویں اوور میں سو رنز پر پویلین لوٹ گئی۔

سری لنکا کی جانب سے سورج راندیو نے چار، ہیراتھ نے تین جبکہ کلاسیکرا نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

اسی بارے میں