اٹلی بھی فٹ بال یورو 2012 کے فائنل میں

تصویر کے کاپی رائٹ s

یورپی ملکوں کے درمیان فٹ بال کےیورو دو ہزار بارہ کے مقابلوں میں اٹلی کی ٹیم دوسرے سیمی فائنل مقابلے میں جرمنی کو ایک کے مقابلے میں دو گول سے ہرا کر فائنل میں پہنچ گئی ہے۔

سپین کی ٹیم پرتگال کو پہلے سیمی فائنل میں ہرا کر پہلے ہی فائنل میں پہنچ چکی ہے۔

دوسرے سیمی فائنل کی تصاویر

اٹلی اور جرمنی کے درمیان کانٹے کا مقابلہ ہوا اور پہلے ہاف میں دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے کے گول پر زبردست حملے کیے۔ جرمنی کو کئی ایک موقعے ملے لیکن اٹلی کے گول کپیر بوفن اور اٹلی کے دفاعی کھلاڑی اندرے پرلو جرمنی کی ٹیم اور گول میں ہر مرتبہ حائل رہے۔ جرمنی کے فارورڈز کسی بھی موقعہ پر گیند کو اٹلی کے گول کپیر اور پرلو کی پہنچ سے دور کر کے گول تک نہ پہنچا پائے۔

اٹلی کی طرف سے ماریو بیلوٹلی نے دو گول کیے لیکن اٹلی کے دفاعی کھلاڑی اندرے پرلو نے زبردست کھیل پیش کیا اور جرمنی کے ہر حملے کو ناکام بنا دیا۔

بیلوٹلی نے پہلا گول ایک کارنر سے دیے گئے پاس پر سر مار کیا جب کے دوسرا گول انھوں نے ایک زبردست ہٹ لگا کر کیا جس کو روکنا کسی بھی گول کیپر کے لیے تقریباً ناممکن تھا۔

اٹلی کے ہاتھوں جرمنی کو کسی بڑے بین الاقوامی میچ میں آٹھویں مرتبہ شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

سنہ دو ہزار چھ کے فٹ بال کے عالمی کپ میں بھی پرلو ہی کی مدد سے اضافی وقت میں اٹلی نے جرمنی پر گول کر کے دو صفر سے فتح حاصل کی تھی۔ سنہ دو ہزار چھ کے فٹ بال کے عالمی کپ کی میزبانی بھی جرمنی ہی کر رہا تھا۔

جرمنی کی نسبتاً ناتجربہ کار اور نئی ٹیم تھی جسے اب خالی ہاتھ گھر لوٹنا پڑے گا اور اس امید کے ساتھ کے شاید یہ ٹیم سنہ دو ہزار چودہ میں برازیل میں ہونے والی عالمی کپ میں کامیابی حاصل کر سکے۔

اسی بارے میں