علیم ڈار کے ڈیڑھ سو ون ڈے مکمل

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption علیم ڈار گزشتہ تین برس سے لگاتار آئی سی سی کے بہترین امپائر کی ٹرافی جیت رہے ہیں

پاکستان کے علیم ڈار ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ میں ڈیڑھ سو یا اس سے زائد ایک روزہ میچوں میں امپائرنگ کے فرائض سرانجام دینے والے ساتویں امپائر بن گئے ہیں۔

انہوں نے یہ سنگِ میل جمعہ کو آسٹریلیا اور انگلینڈ کے مابین ایک روزہ میچ کے دوران عبور کیا۔

آئی سی سی کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق چوالیس سالہ علیم ڈار کو اس موقع پر ان کی خدمات کے اعتراف میں یادگاری شیلڈ پیش بھی کی گئی۔

علیم ڈار آئی سی سی کے امپائرز کے ایلیٹ پینل میں شامل ہیں اور گزشتہ تین برس سے لگاتار آئی سی سی کے بہترین امپائر کی ٹرافی جیت رہے ہیں۔

انہوں نے اپنے عالمی امپائرنگ کیرئر کا آغاز فروری دو ہزار میں گوجرانوالہ میں پاکستان اور سری لنکا کے مابین ایک روزہ میچ سے کیا تھا۔

انہیں دو ہزار دو میں ایلیٹ پینل میں شامل کیا گیا جبکہ اکتوبر دو ہزار تین میں ڈھاکہ میں بنگلہ دیش اور انگلینڈ کے مابین ٹیسٹ میچ ان کے امپائرنگ کیرئر کا پہلا ٹیسٹ تھا اور اب تک وہ چوہتر ٹیسٹ میچ کھلوا چکے ہیں۔

علیم ڈار دو ہزار سات اور دو ہزار گیارہ میں آئی سی سی ورلڈ کپ کے فائنلز میں بھی امپائرنگ کر چکے ہیں۔

ڈیڑھ سو ون ڈے میچوں کی تکمیل پر علیم ڈار کا کہنا تھا کہ ’ میں اس مخصوص کلب کا رکن بن کر بہت خوش ہوں۔ اس فہرست میں اس معزز پیشے کے سب سے قابلِ احترام نام شامل ہیں‘۔

انہوں نے کہا کہ ’میں خود کو انتہائی خوش قسمت سمجھتا ہوں کہ مجھے اتنے مواقع ملے اور پی سی بی اور آئی سی سی کی حمایت حاصل رہی‘۔

آئی سی سی کی تاریخ میں سب سے زیادہ ایک روزہ میچ سپروائز کرنے کا اعزاز نیوزی لینڈ کے روڈی کوئرٹزن کو حاصل ہے جنہوں نے دو ہزار دس تک آٹھ سالہ کیرئر میں دو سو نو میچوں میں امپائرنگ کی۔

آج کل ایلیٹ پینل میں شامل امپائرز میں سب سے زیادہ ایک روزہ میچ کھلانے کا ریکارڈ نیوزی لینڈ کے ہی سائمن ٹوفل کے پاس ہے جنہوں نے اب تک ایک سو بہتّر میچ سپروائز کیے ہیں۔

اسی بارے میں