یوسین بولٹ کو جمیکن ٹرائلز میں شکست

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption بولٹ نے سو میٹر کا فاصلہ نو اعشاریہ آٹھ چھ سیکنڈ میں طے کر کے دوسری پوزیشن حاصل کی

سو میٹر دوڑ کے اولمپک چیمپیئن جمیکا کے یوسین بولٹ کو اولمپکس کے لیے منتخب کی جانے والی جمیکن ٹیم کے ٹرائلز کے دوران ریس میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

کنگسٹن کے نیشنل سٹیڈیم میں منعقدہ جمیکن ٹرائلز میں یوہان بلیک نے مقررہ فاصلہ نو اعشاریہ سات پانچ سیکنڈ میں طے کر کے بولٹ کو ہرایا۔

یہ یوہان کے کیریئر اور اس سال میں ان کا تیز ترین وقت ہے۔

بولٹ نے اس ریس میں سو میٹر کا فاصلہ نو اعشاریہ آٹھ چھ سیکنڈ میں طے کر کے دوسری پوزیشن حاصل کی جبکہ ان کے ساتھی ایتھلیٹ اوصافا پاول نو اعشاریہ آٹھ آٹھ سیکنڈ کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہے۔

یہ تینوں ایتھلیٹ اولمپکس میں سو میٹر دوڑ کے لیے جمیکن ٹیم کا حصہ بننے میں کامیاب رہے۔

اس وقت دنیا میں سو میٹر دوڑ کا عالمی ریکارڈ یوسین بولٹ کے پاس ہےجو انہوں نے مقررہ فاصلہ نو اعشاریہ پانچ آٹھ سیکنڈ میں طے کر کے بنایا تھا۔

ریس جیتنے کے بعد یوہان بلیک نے کہا کہ ’مجھ پر کوئی دباؤ نہیں۔ سب ٹھیک ہے۔ میں صرف خوش قسمت ہوں۔ اب میں جمیکا کا قومی چیمپیئن ہوں اور اسی اعزاز کے ساتھ اولمپکس میں جاؤں گا‘۔

اس اپ سیٹ شکست کے بعد یوسین نے سست آغاز کو اپنی ہار کی وجہ قرار دیا۔ ’مجھے اس ریس کو نظرانداز کرنا ہوگا۔ مجھے آغاز میں مشکل ہوئی لیکن میں نے سوچا تھا کہ میں ہار نہیں مان سکتا‘۔

یوسین بولٹ نے دو ہزار آٹھ میں ہونے والے بیجنگ اولمپکس میں سو، دو سو اور چار ضرب سو میٹر ریلے ریس میں طلائی تمغے جیتے تھے۔

اسی بارے میں