اولمپکس: خالی سٹیڈیم، ٹکٹ گھر کی چابی گم

تصویر کے کاپی رائٹ Daniel Ramalho

اولمپکس کے منتظمین اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں کہ سوئمنگ کے مقابلوں کے دوران سینکڑوں کی تعداد میں نشستیں خالی کیوں تھیں۔

سوئمنگ کے مقابلے لندن کے ایکواٹک سینٹر میں منعقد ہو رہے ہیں۔

بی بی سی کے نامہ نگار نک ہوپ کے مطابق سٹیڈیم کے اوپر والے حصے میں تمام سیٹیں فروخت ہو چکی تھیں جبکہ نیچے والے حصوں میں سینکڑوں کی تعداد میں نشستیں خالی تھیں۔

لندن اولمپکس کے منتظمین نے ان میں سے کچھ نشستیں میڈیا اور پریس کے لیے مختص کر رکھی ہیں۔

سنیچر کی صبح کو ملکہ برطانیہ اورڈیوک آف ایڈنبرا نے ایکواٹک سینٹر کا دورہ کیا تھا اور اس وقت سوئمنگ مقابلوں کا پہلا سیشن جاری تھا اور اس میں اولمپکس مقابلوں میں چودہ بار گولڈ میڈل حاصل کرنے والے تیراک مائیکل فلپس چار سو میٹر انفرادی میڈلے مقابلوں کے فائنل میں پہنچنے میں کامیاب ہوئے۔

نامہ نگار کے مطابق خالی سیٹیں ہی سوئمنگ کے مقابلوں کے پہلے سیشن کا منفی پہلو تھا تاہم اس کا ایکواٹک سینٹر میں ماحول پر کوئی فرق پڑا لیکن اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ لندن اولمپکس کے منتظمین کو ابھی بہت کچھ کرنا ہے۔

دریں اثناء ٹینس مقابلوں کے شائقین نے بی بی سی کو شکایت کی ہے کہ ومبلڈن میں انہیں طویل قطاروں میں ٹکٹ کے حصول کے لیے انتظار کرنا پڑا۔

سنیچر کی صبح کو اس وقت شائقین کو سٹیڈیمز میں داخلے کے لیے ٹکٹ کے حصول میں مشکل پیش آئی جب ٹکٹ گھر کی چابی گم گئی۔

ابھی تک لندن اولمپکس کے منتظمین کی جانب سے کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

اسی بارے میں