پاکستان سپین کا میچ برابر، بھارت کو شکست

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption کھیل کا پانسہ پاکستانی کھلاڑی ریحان بٹ نے ایک پاس پر گول کر کے پلٹ دیا

لندن اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں پاکستان کا پہلا میچ سپین کے ساتھ ایک ایک گول سے برابر رہا۔ پہلے ہاف کے اختتام تک میچ بغیر کسی گول کے برابر رہا۔

میچ کا آغاز تیزی سے ہوا اور ابتدائی دس منٹ میں دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے کے گول پر کئی حملے کیے۔

پہلے ہاف میں پاکستان کی ٹیم کو دو جبکہ سپین کو ایک پینلٹی کارنر ملا تاہم کوئی بھی ٹیم ان مواقع سے فائدہ نہ اٹھا سکی۔

تاہم دوسرے ہاف میں کھیل بہت تیزی سے شروع ہوا اور اچانک کھیل کا پانسہ پاکستانی کھلاڑی ریحان بٹ نے ایک پاس پر گول کر کے پلٹ دیا۔

اس گول کے فوری بعد سپین کے کھلاڑیوں نے ایک گول کرکے مقابلہ برابر کردیا۔

اس کے بعد سپین کے کھلاڑیوں نے پاکستانی گول پر اپنا دباؤ برقرار رکھا اور ایک گول کیا جسے بعد میں تھرڈ ایمپائر نے مسترد کردیا۔

کھیل میں تیزی دوسرے ہاف میں مسلسل برقرار رہی اور دونوں جانب سے مخالف حریف کے گول پر حملے ہوتے رہے لیکن کوئی بھی ٹیم فیصلہ کن گول کرنے میں ناکام رہی۔

دوسرے ہاف میں زیادہ تر دباؤ پاکستانی گول پر رہا لیکن پاکستانی ٹیم نے بھی جاندار طریقے سے دباؤ کا سامنا کیا۔

پاکستان اولمپکس مقابلوں میں اپنا دوسرا میچ یکم اگست کو ارجنٹائن کے خلاف کھیلے گا اور یہ میچ پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے شروع ہوگا۔

پاکستانی ٹیم سنہ انیس سو بانوے کے بعد اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں وکٹری سٹینڈ پر پہنچنے میں ناکام رہی ہے۔ انیس سو بانوے کے بارسلونا اولمپکس میں شہباز احمد سینیئر کی قیادت میں کانسی کا تمغہ حاصل کیا تھا۔

بھارت بمقابلہ نیدرلینڈ

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

بھارت کو نیدرلینڈ نے تین دو سے شکست دے دی۔ بھارت جو بیجنگ اولمپکس کے لیے کوالیفائی نہیں کر سکا کو پہلے ہی ہاف میں دو گول کھانے پڑے۔

پہلے ہاف میں نیدرلینڈ چھایا رہا اور ہر طرف سے باآسانی حملے کیے۔ ان حملوں کے نتیجے میں نیدرلینڈ نے دو گول کیے۔

پہلے ہاف میں بھارت کا کھیل معیاری نہیں تھا۔ تاہم ایک دو اچھے حملے بھارت نے بھی کیے جن کو نیدرلینڈ کے گول کیپر نے گول بچا لیے۔

دوسرے ہاف میں بھارت نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور نیدرلینڈ کو دباؤ میں رکھا اور دو گول کیے۔

تاہم ان دو گولوں کے بعد نیدرلینڈ نے ایک بار پھر دباؤ ڈالا اور بھارت کے خلاف فیصلہ کن گول کرنے میں کامیاب ہوا۔

آسٹریلیا بمقابلہ جنوبی افریقہ

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

ورلڈ چیمپیئن آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کو اولمپکس ہاکی میچ میں چھ صفر سے شکست دی۔ آسٹریلیا کے کپتان جیمی وایئر نے تین گول کیے۔

جیمی کی طرف سے ان تین گولوں کے ساتھ ان کے مجموعی گولوں کی تعداد 179 ہو گئی ہے۔ اس طرح انہوں نے آسٹریلیا کے سابق کھلاڑی اور نیوزی لینڈ کے موجودہ کوچ مارک ہیگر کا سب سے زیادہ گول کرنے کا ریکارڈ برابر کردیا ہے۔

جیمی نے پہلے دو گول پنیلٹی سٹروکس کے ذریعے کیے اور تیسرا گول پنیلٹی کارنر پر کیا۔ آسٹریلیا نے پہلے ہاف میں دو گول جبکہ باقی چار گول دوسرے ہاف میں کیے۔ آسٹریلیا نے پہلا گول سولہویں منٹ میں کیا جبکہ دوسرا گول پہلے ہاف ختم ہونے میں دو منٹ قبل کیا۔

جنوبی کوریا بمقابلہ نیوزی لینڈ

ایشین گیمز کے چیمپیئن جنوبی کوریا نے نتوزی لینڈ کو دو صفر سے شکست دی۔ جنوبی کوریا کے یو ہو سک نے دونوں گول کیے۔ میچ کے بعد انہوں نے کہا کہ ان کو خوشی ہے کہ انہوں نے دونوں گول کیے کیونکہ وہ کافی عرصے سے انٹرنیشنل پیچز میں گول کرنے میں ناکام رہے تھے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے سائمن چائلڈ نے میچ کے آغاز ہی میں گول کرنے کا ایک عمدہ موقع ضائع کیا۔

جنوبی کوریا نے دونوں گول میچ کے پہلے ہاف میں کیے۔

اسی بارے میں