پاکستان اور سپین کا میچ برابری پر ختم

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption لندن اولمپکس کے تیسرے دن پاکستان اور سپین کے درمیان ہونے والے ہاکی میچ کا نتیجہ ایک ایک گول سے برابر رہا۔

لندن اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں پاکستان کا پہلا میچ سپین کے ساتھ ایک ایک گول سے برابر رہا۔

پہلے ہاف کے اختتام تک میچ بغیر کسی گول کے برابر رہا۔

میچ کا آغاز تیزی سے ہوا اور ابتدائی دس منٹ میں دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے کے گول پر کئی حملے کیے۔

پہلے ہاف میں پاکستان کی ٹیم کو دو جبکہ سپین کو ایک پینلٹی کارنر ملا تاہم کوئی بھی ٹیم ان مواقع سے فائدہ نہ اٹھا سکی۔

تاہم دوسرے ہاف میں کھیل بہت تیزی سے شروع ہوا اور اچانک کھیل کا پانسہ پاکستانی کھلاڑی ریحان بٹ نے ایک پاس پر گول کر کے پلٹ دیا۔

اس گول کے فوری بعد سپین کے کھلاڑیوں نے ایک گول کرکے مقابلہ برابر کردیا۔

اس کے بعد سپین کے کھلاڑیوں نے پاکستانی گول پر اپنا دباؤ برقرار رکھا اور ایک گول کیا جسے بعد میں تھرڈ ایمپائر نے مسترد کردیا۔

کھیل میں تیزی دوسرے ہاف میں مسلسل برقرار رہی اور دونوں جانب سے مخالف حریف کے گول پر حملے ہوتے رہے لیکن کوئی بھی ٹیم فیصلہ کن گول کرنے میں ناکام رہی۔

دوسرے ہاف میں زیادہ تر دباؤ پاکستانی گول پر رہا لیکن پاکستانی ٹیم نے بھی جاندار طریقے سے دباؤ کا سامنا کیا۔

پاکستان اولمپکس مقابلوں میں اپنا دوسرا میچ یکم اگست کو ارجنٹائن کے خلاف کھیلے گا اور یہ میچ پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات گیارہ بجے شروع ہوگا۔

پاکستانی ٹیم سنہ انیس سو بانوے کے بعد اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں وکٹری سٹینڈ پر پہنچنے میں ناکام رہی ہے۔ انیس سو بانوے کے بارسلونا اولمپکس میں شہباز احمد سینیئر کی قیادت میں کانسی کا تمغہ حاصل کیا تھا۔

اسی بارے میں