لندن اولمپکس: چین تیس تمغوں کے ساتھ سرفہرست

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 2 اگست 2012 ,‭ 23:40 GMT 04:40 PST

برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں جاری تیسویں اولمپکس مقابلوں کے پانچویں دن کے اختتام پر چین تیس تمغوں کے ساتھ سرفہرست رہا ہے جبکہ امریکہ انتیس تمغوں کے ساتھ دوسری پوزیشن پر ہے اور جنوبی کوریا چوتھی پوزیشن سے فرانس کی جگہ تیسری پوزیشن پر آ گیا ہے۔

میزبان ملک برطانیہ کشتی رانی اور سائیکلنگ کے مقابلوں میں طلائی تمغہ جیتنے میں کامیاب رہا ہے۔

لندن اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں پاکستان نے اپنے دوسرے میچ میں ارجنٹائن کو صفر کے مقابلے میں دو گول سے شکست دے دی ہے۔

چین نے طلائی کے سترہ، نقرئی کے نو اور کانسی کے چار میڈلز حاصل کیے ہیں۔

کلِک لندن اولمپکس 2012 پر بی بی سی اردو کا خصوصی ضمیمہ

میڈلز کی دوڑ میں امریکہ نے سونے کے بارہ ، نقرئی کے آٹھ اور کانسی کےنو تمغے یعنی کل انتیس میڈلز جیتے ہیں۔

اس فہرست میں تیسرا نمبر جنوبی کوریا کا ہے جس نے اب تک چھ طلائی، دو نقرئی اور کانسی کے چار تمغے جیتے ہیں جبکہ فرانس چوتھے اور شمالی کوریا پانچویں نمبر پر ہے۔

لندن اولمپکس کا پانچواں دن

لندن اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں پاکستان نے اپنے دوسرے میچ میں ارجنٹائن کو صفر کے مقابلے میں دو گول سے شکست دے دی ہے۔

بدھ کو کھیلے گئے پہلے میچ میں آسٹریلیا نے سپین کو پانچ صفر سے ہرا دیا۔ دیگر میچوں میں جنوبی افریقہ اور برطانیہ کا میچ دو دو گول سے برابر رہا۔

پول بی میں ہالینڈ نے بیلیجیئم کو ایک کے مقابلے میں تین گول سے جبکہ نیوزی لینڈ نے بھارت کو تین ایک سے شکست دے دی ہے۔

اس کے علاوہ پول بی کے ایک میچ میں جرمنی نے جنوبی کوریا کو صفر کے مقابلے میں ایک گول سے شکست دے دی ہے۔

میزبان ملک برطانیہ نے کشتی رانی اور سائیکنگ میں طلائی تمغہ جیتا ہے۔

سائیکلنگ میں برطانیہ کی جانب سے ٹور ڈی فرانس جیتنے والے بریڈلے وگنز نے ٹائم ٹرائل مقابلوں میں جبکہ کشتی رانی کے ڈبلز مقابلوں میں ہلین گلوور اور ہیتھر سٹننگ نے طلائی تمغہ جیتا۔

کشتی رانی کے مقابلوں میں میزبان ملک برطانیہ کو پہلا طلائی تمغہ ملا

پانچویں دن تیراکی میں امریکہ کے ناتھن ایڈرین نے سو میٹر بٹر فلائی مقابلوں میں طلائی کا تمغہ جیتا ہے جبکہ امریکی کی خواتین تیراک نے چار ضرب دو سو میٹر فری سٹائل ریلے میں طلائی تمغہ جیتا۔ ہنگری کے ڈینئیل گیوترا نے دو سو میٹر بریسٹ سٹروک میں طلائی تمغہ جیت کر نیا عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے۔

تیراکی میں ہی چین کی جیو لیونگ نے دو سو میٹر بٹر فلائی مقابلے میں طلائی تمغہ حاصل کیا۔

ڈائیونگ میں مردوں کے تین میٹر سنکرونائزڈ سپرنگ بورڈ مقابلوں میں چین کے لیو یوٹونگ اور کن کائی نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

جمناسٹک انفرادی آل اوور مقابلوں میں جاپان کے کوہئی یوچیمورا نے گولڈ میڈیا حاصل کیا۔

جوڈو میں مرد نوّے کلوگرام کی درجہ بندی میں جنوبی کوریا کے ڈیو نام سونگ نے جبکہ خواتین کی ستر کلوگرام کی درجہ بندی میں فرانس کی لوئس ڈیکوسی نے طلائی تمغہ جیتا۔

خواتین کی انہتر کلوگرام کی درجہ بندی میں جنوبی کوریا کی رم یونگ سم طلائی تمغہ حاصل کرنے میں کامیاب رہیں۔

شمشیر زنی انفرادی ایپی مردوں کے مقابلے میں وینزویلا کے لیمارڈو نے جب کہ خواتین کے مقابلوں میں جنوبی کوریا کی جیون کم نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔


اس کے علاوہ ٹیبل ٹینس میں خواتین کے انفرادی مقابلوں کے فائنل میں چین کی لی نے ہم وطن ڈنگ نگ کو چار ایک سے شکست دے کر طلائی تمغہ جیتا۔

جان بوجھ کر میچ ہارنےکی تحقیقات

میچ کے دوران ریفری نے ایک مرتبہ کورٹ پر آ کر کھلاڑیوں کو تنبیہ بھی کی تھی

لندن اولمپکس میں شریک چینی دستے کے حکام نے ان الزامات کی تحقیقات شروع کر دی ہیں کہ دو چینی بیڈمنٹن کھلاڑیوں نے ایک میچ ’جان بوجھ کر ہارا‘۔

چین کی سرکاری خبر رساں ایجنسی زنہوا کے مطابق چینی اولمپک کمیٹی کے ایک ترجمان کا کہنا ہے کہ کمیٹی کسی بھی ایسے رویے کی مخالف ہے جو کھیل کی روح اور اخلاقیات کے خلاف ہو۔

باقی چھ کھلاڑیوں میں سے چار کا تعلق جنوبی کوریا اور دو کا انڈونیشیا سے ہے۔

چین کی یو یئینگ اور وانگ زیاؤلی اور جنوبی کوریا کی جونگ کیونک یون اور کم ہانا پر دلجمعی سے نہ کھیلنے کا الزام اولمپکس میں ان کے میچ میں تماشائیوں کی شدید ہوٹنگ کے بعد لگایا گیا۔

اس میچ میں سب سے لمبی ریلی صرف چار شاٹس پر مشتمل تھی اور میچ کے دوران ریفری نے ایک مرتبہ کورٹ پر آ کر کھلاڑیوں کو تنبیہ بھی کی۔

اس میچ سے قبل یہ دونوں ٹیمیں کوارٹر فائنل کے لیے کوالیفائی کر چکی تھیں اور اطلاعات کے مطابق دونوں ہی یہ میچ ہار کر کوارٹر فائنل میں آسان حریف کا سامنا کرنے کی متمنی تھیں۔

جنوبی کوریائی کھلاڑیوں نے تو اس صورتحال پر تبصرہ نہیں کیا تاہم چینی کھلاڑیوں کا کہنا ہے کہ وہ ناک آْؤٹ مرحلے کے لیے اپنی توانائی بچا رہی تھیں۔

بیڈمنٹن فیڈریشن جنوبی کوریا کی ہی ایک اور ڈبلز جوڑی اور انڈونیشیائی کھلاڑیوں کے مابین میچ کا بھی جائزہ لے رہی ہے۔ یہ دونوں ٹیمیں بھی پہلے ہی کوارٹر فائنل مرحلے میں جگہ بنا چکی تھیں اور یہ میچ ایک بور مقابلے کے بعد انڈونیشیا نے جیتا تھا۔

بی ڈبلیو ایف کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ان چاروں جوڑیوں پر ’میچ میں فتح کے حصول کے لیے بہترین کھیل پیش نہ کرنے‘ اور ’اپنی حرکات سے کھیل کو بدنام کرنے کی کوشش‘ کے الزامات کے تحت کارروائی ہو سکتی ہے۔

اولمپکس مقابلے چوتھا دن: تصاویر

لندن اولمپکس کا چوتھا دن

  • نشانہ بازی کے مقابلوں میں منگل کو سکیٹ شوٹنگ کے کوالیفائنگ راؤنڈ کے آخری دو مرحلے اور پھر فائنل راؤنڈ کھیلا گیا
  • امریکہ کے ونسنٹ ہینکاک نے طلائی تمغہ جیت کر اپنے ملک کے گولڈ میڈلز کی تعداد چھ تک پہنچا دی جبکہ ڈنمارک کے گولڈنگ اینڈرس نے چاندی اور قطر کے ناصر العطیہ نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا
  • برطانوی خواتین کی گھڑ سوار ٹیم نے جس میں شہزادی زارا فلپ بھی شامل ہیں اپنے ملک کے لیے چاندی کا ایک اور تمغہ حاصل کیا
  • شہزادی زارا کو اولمپکس میں حصہ لیتا دیکھنے کے لیے شاہی خاندان کے ارکان بھی گرینچ پہنچے
  • کھیلوں کے چوتھے دن کنوئنگ میں مردوں کے انفرادی مقابل میں بھی ایک طلائی تمغے کا فیصلہ ہوا
  • کنوئنگ میں گولڈ میڈل جیت کر ٹونی ایسٹنگاٹ نے فرانس کو ان کھیلوں میں چوتھا طلائی تمغہ دلوایا ہے
  • جوڈو میں خواتین کے تریسٹھ کلوگرام کی درجہ بندی کے مقابلوں میں جاپان کی یوشی یوئینو اور فرانس کی گیوریس ایمنی نے کانسی کے تمغے جیتے ہیں
  • لندن اولمپکس میں ہاکی میں آج خواتین کے مقابلوں کا دن تھا اور بلجیئم اور چین کا یہ میچ بغیر کسی گول کے برابر رہا
  • شمشیر زنی میں مردوں کا انفرادی فوائل مقابلہ بھی منگل کو کھیلا جا رہا ہے


اولمپکس میڈل ٹیبل



لائیو: اولمپکس 2012

اس مواد کو دیکھنے کے لیے آپ کے براؤزر کا جاوا سکرپٹ کو چلانا ضروری ہے

(BBC Sport Olympics (In English

لائیو: اولمپکس 2012

شروع ہونے والے ایونٹ

مقابلے آغاز
- -
- -
- -
- -
- -

مکمل شیڈول دیکھیں (انگریزی میں)

تازہ ترین - گولڈ میڈلسٹ

طلائی تمغے انٹرایکٹ کرنے کے لیے کرسر اس کے اوپر لائیں

0 302

میڈل ٹیبل

رینک طلائی تمغے چاندی کے تمغے کانسی کے تمغے

تمغوں کا مکمل ٹیبل دیکھیں

تفصیل

رینک
رینک طلائی تمغے چاندی کے تمغے کانسی کے تمغے

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔