چین کو دوبارہ برتری حاصل، یوسین بولٹ کا اعزاز

آخری وقت اشاعت:  پير 6 اگست 2012 ,‭ 01:09 GMT 06:09 PST

برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں جاری تیسویں اولمپکس مقابلوں کے نویں روز امریکہ کو تمغوں میں دو روز سے حاصل برتری ختم ہو گئی ہے اور اب چین تیس طلائی تمغوں کے ساتھ دوبارہ پہلی پوزیشن پر آ گیا ہے۔

امریکہ مجموعی طور پر ساٹھ تمغوں کے ساتھ دوسری پوزیشن پر ہے۔

جمیکا سے تعلق رکھنے والے ایتھلیٹ یوسین بولٹ نے مردوں کی سو میٹر دوڑ میں طلائی تمغہ جیت کر دنیا کے سب سے تیز دوڑنے والے مرد کا اعزاز برقرار رکھا۔

برطانیہ کے اینڈی مرے نے ٹینس کے فائنل میں راجر فیڈرر کو شکست دے کر طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔ ہاکی میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کو شکست دی جبکہ جنوبی جوریا نے بھارت کو شکست دی۔

برطانیہ سینتیس تمغوں کے ساتھ تیسری جبکہ جنوبی کوریا بیس تمغوں کے ساتھ چوتھی پوزیشن پر ہے۔

کلِک لندن اولمپکس 2012 پر بی بی سی اردو کا خصوصی ضمیمہ

نویں دن کے کھیل

لندن اولمپکس کے نویں روز اکیس کھیلوں میں تئیس تمغوں کے لیے مقابلہ ہوا۔ نویں روز اولمپکس کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کے باکسنگ میچ بھی شروع ہوئے۔

چین کے ژو کائی نے جمناسٹک میں پانچواں تمغہ جیت لیا ہے۔

مردوں کے ٹینس کے مقابلوں میں برطانوی کھلاڑی اینڈی مرے نے عالمی نمبر ایک کھلاڑی راجر فیڈرر کو شکست دے کر طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔ سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر نے اینڈی مرے کو ومبلڈن کے فائنل میں شکست دی تھی۔

سنہ انیس سو آٹھ کے بعد برطانیہ نے ٹینس میں طلائی تمغہ جیتا ہے۔

اولمپک ٹینس میں اینڈی نے راجر کو 2-6، 1-6، 4-6 سے شکست دی۔ دوسری جانب خواتین کے ڈبلز ٹینس مقابلوں میں سرینا ولیمز اور وینس ولیمز نے طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔

مردوں کی ہاکی میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کو چار کے مقابلے میں پانچ گولز سے شکست دی۔

پول بی کے ایک میچ میں جنوبی کوریا نے بھارت کو ایک کے مقابلے میں چار گولز سے شکست دی۔

خواتین کی سائیکلنگ میں برطانوی وکٹوریہ پینڈلٹن نے کوالیفائنگ راؤنڈ میں نیا اولمپک ریکارڈ قائم کیا ہے۔

وکٹوریہ نے اپنا لیپ 10.724 سیکنڈ میں مکمل کیا۔ تاہم وہ عالمی ریکارڈ نہ توڑ سکیں جو 10.643 سیکنڈ ہے۔ عالمی ریکارڈ جرمنی کی میریئم ویلٹ کے نام ہے۔

ایتھلیٹکس میں جمیکا سے تعلق رکھنے والے ایتھلیٹ یوسین بولٹ نے مردوں کی سو میٹر دوڑ کے فائنل میں طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔

انہوں نے سو میٹر کا فاصلہ نو اعشاریہ چھ تین سیکنڈ میں طے کر کے ایک نیا اولمپک ریکارڈ قائم کیا ہے۔

اس سے پہلے انہوں نے بیجنگ اولمپکس میں نو اعشاریہ چھ نو سیکنڈ میں یہ فاصلہ طے کیا تھا۔

جیمکا کے ہی یوہان بلیک نے چاندی اور امریکہ کے جسٹن گیٹلن نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

ایتھلیٹ یوسین بولٹ نے سو میٹر کا فاصلہ نو اعشاریہ چھ تین سیکنڈ میں طے کر کے ایک نیا اولمپک ریکارڈ قائم کیا

خواتین کی میراتھن دوڑ میں ایتھوپیا کی ٹکی گیلینا نے طلائی تمغہ جیتا اور اولمپک ریکارڈ بنایا۔

خواتین کے ٹرپل جمپ مقابلوں میں قزاقستان کی اولگا رپاکوا نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

مردوں کے ہیمر تھرو مقابلوں میں ہنگری کے کرسچین پارس نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

خواتین کی چار سو میٹر دوڑ کے فائنل میں امریکہ کی سانیہ رچرڈز نے طلائی تمغہ حاصل کیا جبکہ برطانیہ کی کرسٹین دوسری پوزیشن پر رہیں۔

مردوں کی تین ہزار سٹیپل چز’رکاوٹوں‘ کی دوڑ میں کینیا کے ایزکیل کیمبوئی نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

ویٹ لفٹنگ کے مقابلوں میں خواتین کی 75 کلوگرام درجہ بندی میں چین کی زولو زوہو نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

ڈائیونگ کے مقابلوں میں تین میٹر سپرنگ بورڈ درجہ بندی میں چین کی وو مینکسیا نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

کشتی رانی کے مقابلوں میں مردوں کی سٹار درجہ بندی کے فائنل میں سویڈن کے فریڈرک اور میکس نے طلائی تمغہ جیتا جب کہ مردوں کی فن درجہ بندی میں برطانیہ کے بن اینسلے نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔

بیڈمنٹن کے مقابلوں میں مردوں کے سنگلز فائنل میں چین کے لن ڈین نے طلائی تمغہ حاصل کیا۔ اس طرح چین نے اس کھیل میں تمام پانچ کے پانچ طلائی تمغے جیت لیے۔ مردوں کے ڈبلز فائنل میں بھی چین کے یون چوئی اور ہیفنگ فو کامیاب رہے۔

پاکستان کی جیت

لندن اولمپکس دو ہزار بارہ میں مردوں کے ہاکی مقابلوں میں پاکستان نے جنوبی افریقہ کو چار کے مقابلے میں پانچ گولوں سے شکست دے دی ہے۔

پاکستان اور جنوبی افریقے کے درمیان میچ تیز اور دلچسپ رہا۔

پہلا گول جنوبی افریقہ کی جانب سے پہلے ڈیڑھ منٹ میں کیا گیا۔ جنوبی افریقہ کی جانب سے فیلڈ گول کیا گیا اور گول تھامس میکڈیڈ نے کیا۔

اس گول کے بعد پاکستان نے جنوبی افریقہ کے گول پر حملے کرنے شروع کیے۔

پاکستان کو پندرہویں منٹ میں ایک پنلٹی کارنر ملا لیکن پاکستان کے کپتان اور پنلٹی کارنر ایکسپرٹ سہیل عباس گول کرنے میں ناکام رہے۔

پاکستان کو پہلی کامیابی میچ کے بیسویں منٹ میں ملی جب عبدالحسیم خان نے فیلڈ گول کر کے سکور برابر کردیا۔

پاکستان کے اس گول کے دو منٹ بعد ہی جنوبی افریقہ کو پنلٹی کارنر ملا جس پر جسٹن ریڈ راس نے جنوبی افریقہ کی جانب سے دوسرا گول کردیا۔

تاہم پاکستان نے اس گول کا جواب ایک منٹ کے اندر ہی دے دیا جب شفقت رسول نے بہترین پاس پر گول کیا۔

پاکستان کو میچ کے چوبیسویں منٹ میں جنوبی افریقہ کے خلاف اس وقت برتری حاصل ہوئی جب عبدالحسیم نے میچ کے چھبیسویں منٹ میں فیلڈ گول کیا۔

میچ کے پہلے ہاف کے آخری چند سیکنڈوں میں جنوبی افریقہ کو پنلٹی کارنر ملا جس پر اس نے گول کر کے سکور تین تین گول سے برابر کردیا۔

دوسرے ہاف کے شروع ہی میں جنوبی افریقہ نے ایک اور گول کر کے ایک گول سے برتری حاصل کر لی۔

تاہم پاکستان نے یکے بعد دیگرے حملے کیے اور جنوبی افریقہ پر دباؤ جاری رکھا۔

پاکستان کی جانب سے چوتھا گول سہیل عباس نے پینلٹی کارنر پر کیا۔ تاہم پاکستان کو برتری دلوانے والے وسیم احمد تھے جنہوں نے عمدہ فیلڈ گول کیا۔

ہاکی کی عالمی درجہ بندی میں پاکستان اس وقت آٹھویں جبکہ جنوبی افریقہ بارہویں نمبر پر ہے۔

پاکستان کی لندن اولمپکس میں صرف ہاکی کے کھیل میں شرکت باقی رہ گئی ہے اور دیگر تمام کھلاڑی کوئی بھی تمغہ جیتے بغیر اپنا اولمپکس کا سفر مکمل کر چکے ہیں۔

اس سے پہلے پاکستان نے لندن اولمپکس دو ہزار بارہ میں ہاکی کے تین میچ کھیلے ہیں جن میں سے ایک میں پاکستان کو فتح، ایک میں شکست اور ایک برابر رہ چکا ہے۔

پاکستان کے گزشتہ میچ میں برطانیہ نے پاکستان کو ایک کے مقابلے میں تین گول سے شکست دی تھی۔

پاکستان نے اپنا پہلا میچ تیس جولائی کو ہسپانیہ کے خلاف کھیلا تھا جو ایک ایک گول سے برابر رہا تھا۔ دوسرے میچ میں پاکستان نے ارجنٹائن کو صفر کے مقابلے میں دو گول سے شکست دی۔

پاکستانی ٹیم سنہ انیس سو بانوے کے بعد سے اولمپکس میں ہاکی کے مقابلوں میں وکٹری سٹینڈ پر پہنچنے میں ناکام رہی ہے۔ انیس سو بانوے کے بارسلونا اولمپکس میں شہباز احمد سینیئر کی قیادت میں پاکستان نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا تھا۔


نویں روز کی تصاویر

  • ایتھلیٹکس میں جمیکا سے تعلق رکھنے والے ایتھلیٹ یوسین بولٹ نے مردوں کی سو میٹر دوڑ کے فائنل میں طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔ انہوں نے سو میٹر کا فاصلہ نو اعشاریہ چھ تین سیکنڈ میں طے کر کے ایک نیا اولمپک ریکارڈ قائم کیا ہے۔
  • اس سے پہلے انہوں نے بیجنگ اولمپکس میں نو اعشاریہ چھ نو سیکنڈ میں یہ فاصلہ طے کیا تھا
  • یوسین بولٹ کی جیت کی خوشی میں جمیکا کے شہریوں میں جشن کا سا سماں تھا
  • خواتین کی چار سو میٹر دوڑ کے فائنل میں امریکہ کی سانیہ رچرڈز نے طلائی تمغہ حاصل کیا جبکہ برطانیہ کی کرسٹین دوسری پوزیشن پر رہیں
  • ڈائیونگ کے مقابلوں میں خواتین کے تین میٹر سپرنگ بورڈ درجہ بندی میں چین کی وو مینکسیا نے طلائی تمغہ حاصل کیا
  • مردوں کے ٹینس کے مقابلوں میں برطانوی کھلاڑی اینڈی مرے نے عالمی نمبر ایک کھلاڑی راجر فیڈرر کو شکست دے کر طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔ سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر نے اینڈی مرے کو ومبلڈن کے فائنل میں شکست دی تھی
  • مردوں کے ہیمر تھرو مقابلوں میں ہنگری کے کرسچین پارس نے طلائی تمغہ حاصل کیا
  • کشتی رانی کے مقابلوں میں مردوں کی سٹار درجہ بندی کے فائنل میں سویڈن کے فریڈرک اور میکس نے طلائی تمغہ جیتا جب کہ مردوں کی فن درجہ بندی میں برطانیہ کے بن اینسلے نے طلائی تمغہ حاصل کیا
  • ویٹ لفٹنگ کے مقابلوں میں خواتین کی 75 کلوگرام درجہ بندی میں چین کی زولو زوہو نے طلائی تمغہ حاصل کیا
  • خواتین کے ٹرپل جمپ مقابلوں میں قزاقستان کی اولگا رپاکوا نے طلائی تمغہ حاصل کیا
  • بیچ والی بال مقابلوں میں خواتین کے سیمی فائنل فرانس نے جرمنی کو اکیس، دس اور اکیس انیس سے، امریکہ نے جمہوریہ چیک کو پچیس، تئیس اور اکیس اٹھارہ سے، چین نے آسٹریلیا کو اور امریکہ نے اٹلی کو شکست دی


لندن کی زندگی پر اولمپکس کا اثر

اس تصویری ایڈیٹر کو استعمال کرنے کے لیے آپ کے کمپیوٹر پر فلیش پلیئر کا ورژن 8 یا اس سے جدید ورژن انسٹال ہونا چاہیے۔
اسے انسٹال کرنے کے لیے نیچے دیے گئے بٹن کر کلک کریں۔

فلیش پلیئر حاصل کریں

اولمپکس میڈل ٹیبل



لائیو: اولمپکس 2012

اس مواد کو دیکھنے کے لیے آپ کے براؤزر کا جاوا سکرپٹ کو چلانا ضروری ہے

(BBC Sport Olympics (In English

لائیو: اولمپکس 2012

شروع ہونے والے ایونٹ

مقابلے آغاز
- -
- -
- -
- -
- -

مکمل شیڈول دیکھیں (انگریزی میں)

تازہ ترین - گولڈ میڈلسٹ

طلائی تمغے انٹرایکٹ کرنے کے لیے کرسر اس کے اوپر لائیں

0 302

میڈل ٹیبل

رینک طلائی تمغے چاندی کے تمغے کانسی کے تمغے

تمغوں کا مکمل ٹیبل دیکھیں

تفصیل

رینک
رینک طلائی تمغے چاندی کے تمغے کانسی کے تمغے

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔