اولمپکس:برطانیہ کے بائیس طلائی تمغے، چینی برتری برقرار

آخری وقت اشاعت:  بدھ 8 اگست 2012 ,‭ 23:35 GMT 04:35 PST

لندن اولمپکس کے گیارہویں روز جہاں ہاکی کے کھیل میں میڈل حاصل کرنے کی پاکستانی امیدیں دم توڑ گئی ہیں وہیں ان کھیلوں میں چین کی برتری برقرار ہے اور برطانیہ نے سنہ انیس سو آٹھ کے بعد اولمپکس میں سب سے زیادہ بائیس طلائی تمغے جیت لیے ہیں۔

اب تک اولمپکس میں چین نے چونتیس طلائی تمغے حاصل کیے ہیں جبکہ اس کے مجموعی تمغوں کی تعداد تہتر ہے۔ امریکہ مجموعی طور پر ستر تمغوں کے ساتھ دوسری پوزیشن پر ہے جن میں سے طلائی تمغوں کی تعداد تیس ہے۔

کلِک لندن اولمپکس 2012 پر بی بی سی اردو کا خصوصی ضمیمہ

برطانیہ نے منگل کو مردوں کے ٹرائی ایتھلون مقابلوں اور گھڑسواری میں مزید دو طلائی تمغے حاصل کیے ہیں اور وہ اب بائیس طلائی اور مجموعی طور پر اڑتالیس تمغوں کے ساتھ تیسری پوزیشن پر ہے۔ برطانیہ نے بیجنگ اولمپکس میں انیس طلائی تمغے جیتے تھے۔

اولمپکس کا گیارہواں دن

چین نے گیارہویں دن جمناسٹکس میں دو طلائی تمغے جیتے ہیں

لندن اولمپکس کے گیارہویں روز بیس کھیلوں میں اکیس تمغوں کے لیے مقابلہ ہوا۔ جن میں ایتھلیٹکس کے علاوہ سائیکلنگ، جمناسٹکس، بادبانی کشی رانی اور ریسلنگ کے لیے مقابلے ہوئے۔

چھیانوے کلو گرام کیٹیگری کے ریسلنگ مقابلوں میں ایران کے غاسم غلام رضا رضائی نے سونے کا تمغہ حاصل کیا۔ ان سے شکست کھانے والے روس کے رستم توتروو نے چاندی کا تمغہ حاصل کیا۔

ریسلنگ میں چھیاسٹھ کلو گرام کیٹگری میں جنوبی کوریا کے کِم ہیون وُو نے سونے کا تمغہ جیتا۔ انہوں نے ہنگری کے ٹامس لورینزک کو شکست کی جنہوں نے چاندی کا تمغہ حاصل کیا۔ مردوں کے غوطہ خوری کے مقابلے میں روس کے الیا زخاروو نے سونے کا تمغہ حاصل کیا جبکہ چین کے کِن کائی نے چاندی اور چین ہی کے چانگ ہیی نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

روس سے تعلق رکھنے والے ایوان یوکہوو نے مردوں کے ہائی جمپ مقابلے میں سونے کا تمغہ حاصل کیا۔ امریکہ کے ایرک کینارڈ نے چاندی کا تمغہ جبکہ قطر کے اتھلیٹ معتز عیسیٰ نے کانسی کا تمغہ جیتا۔

مردوں کی پندرہ سو میٹر دوڑ کے فاتح توفیق مخلوفی رہے جنہوں نے چونتیس اعشاریہ آٹھ سیکنڈ میں دوڑ جیت کر سونے کا تمغہ حاصل کیا۔ یہ ان کے کیریئر کا پہلا تمغہ تھا۔ چاندی کا تمغہ امریکی اتھلیٹ لیونل مینزانو کا مقدر بنا جبکہ میکسیکو کے ابدالاتی لگودر نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

خواتین کی سو میٹر رکاوٹوں کی دوڑ میں آسٹریلیا کی اتھلیٹ سیلی پیرسن نے نئے اولمپک ریکارڈ کے ساتھ سونے کا تمغہ حاصل کیا۔ ان کا وقت بارہ اعشاریہ پینتیس سیکنڈ رہا۔ انہوں نے سابق چیمپئن امریکہ کی ڈان ہارپر کو ہرایا۔ ہارپر نے اس مقابلے میں چاندی کا تمغہ حاصل کیا۔ امریکہ کی ہی کیلی ویلز نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

جرمنی کےرابرٹ ہارٹنگ نے ڈسکس تھرو میں سونے کا تمغہ جیتا۔ ایرانی اتھلیٹ احسان ہدادی نے چاندی کا تمغہ حاصل کیا جبکہ اسٹونیا کے گریڈ کانٹر کانسی کا تمغہ جیتنے میں کامیاب ہوئے۔

مردوں میں ایک سو پانچ کلو کیٹیگری ویٹ لفٹنگ کے مقابلوں میں ایران کے اتھلیٹ بہداد سلیمی نے سونے کا تمغہ حاصل کیا۔ اس قبل ایشین گیمز کے موقع پر انہوں نے سوائن فلو سے متاثر ہونے کے باوجود بھی سونے کا تمغہ حاصل کیا تھا۔ اس مقابلے میں ایران کے ہی سجاد انوشیروانی نے چاندنی کا تمغہ حاصل کیا۔ جبکہ روس سے تعلق رکھنے والے رلسن البیگوو نے کانسی کا تمغہ جیتا۔

مردوں کی کیرین سائیکلنگ میں برطانیہ کے ہوئے سر کِرس نے سونے کا تمغہ حاصل کیا۔ یہ ان کا چھٹا سونے کا تمغہ ہے وہ ان اولمپکس میں سب سے زیادہ تمغے حاصل کرنے والے برطانوی اتھیلٹ بن گئے ہیں۔ جرمنی سے تعلق رکھنے والے اتھلیٹ میکسیملیین لیوی نے چاندی کا تمغے حاصل کیا اور نیوزی لینڈ کے سیمون وین ویلتھووین تیرے نمبر پر آکر کانسی کا تمغہ حاصل کر پائے۔

خواتین کے سپرنٹ سائیکلنگ میں آسٹریلین اتھیلیٹ اینا میاریس نے سونے کا تمغہ جیتا۔ ان کی یہ کامیابی برطانوی اتھلیٹ وکٹوریا پینڈیلٹن کے کیرئیر کا مایوس کن اختتام بنی۔ وکٹوریا کا یہ آخری مقابلہ تھا وہ اس سے قبل آٹھ مرتبہ فاتح بن کر برطانیہ کی کامیاب ترین خاتون سائیکلسٹ کا اعزاز حاصل کر چکی تھیں۔ تاہم اپنے کیریئر کے آحری مقابلے میں وہ آسٹریلیا کی اینا سے پیچھے رہ گئیں انہوں نے چاندی کا تمغہ حاصل کیا۔ اسی مقابلے میں چین کی گاؤ شوانگ کے کانسی کا تمغہ جیتا۔

مرحلہ وار سائیکلنگ کے خواتین کے پانچ سو میٹر ٹائم ٹرائل فائنل میں برطانیہ کی لورا ٹروٹ نے کامیابی حاصل کی۔

خواتین کے جمناسٹک مقابلوں میں امریکی جمنسٹ ریسمن ایلکزینڈرا نے سونے کا تمغہ جیتا۔ رومینا کی پونور کیٹالینا چاندی اور روس کی عالیہ مصطفینا کانسی کے میڈل حاصل کرنے میں کامیاب ہوئیں۔

ٹیبل ٹینس میں خواتین کے ٹیم فائنل مقابلوں میں چین نے جاپان کو شکست دے کر طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔ اس سے پہلے کانسی کے تمغے کے لیے کھیلے گئے میچ میں جنوبی کوریا سنگاپور سے ہار چکا ہے۔

خواتین کے سنکرونائزڈ سوئمنگ یعنی مطابقت کے ساتھ تیراکی کے مقابلوں میں روس کی اشچینکو نٹالیا اور روماشینا سویت لانا نے شاندار کارکردگی کے ساتھ طلائی تمغہ جیتا۔

مردوں کے ہاریزاٹل بارز جمناسٹکس مقابلوں میں ہالینڈ کے زونڈرلینڈ ایپکے نے سونے کا تمغہ جیتا جبکہ جرمنی کے ہیمبیو غن فابیئاں دوسرے نمبر کے ساتھ چاندی کے تمغے کے حقدار رہے۔ چین کے زو کائی کانسی کے تمغے کے چقدار بنے۔

چین کی ڈینگ لن لن نے خواتین کے بیم جمناسٹکس مقابلوں میں اپنے ملک کے لیے تینتیسواں طلائی تمغہ حاصل کیا ہے۔ چین کی سوئی لو اس مقابلے میں دوسرے جبکہ رومانیہ کی جمناسٹ تیسرے نمبر پر رہیں۔

چین کے ہی فینگ زہی نے مردوں میں پیرالل بارز جمناسٹک مقابلے میں چین کو دن کا پہلا طلائی تمغہ دلوایا۔ اس مقابلے میں جرمنی نے نقرئی اور فرانس نے کانسی کا تمغہ جیتا۔

مردوں کی کشتی رانی کے مقابلوں میں ہالینڈ کے ڈوریئن وان رسلبرج نے طلائی، چاندی کا برطانیہ کے نک ڈیمپسی جبکہ پولینڈ کے پزیمسلہ میئارکزنسکی نے کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔

خواتین کی کشتی رانی کے مقابلوں میں سپین کی ماریانہ نیئرا کامیاب رہیں اور طلائی تمغہ جیتا۔ فن لینڈ کی تولی پتیحا نے چاندی جبکہ پولینڈ کی زوفیا نوسیتی کلیپاکہ کانسی کا تمغہ حاصل کر سکیں۔

مردوں کے ٹرائی ایتھلون مقابلوں میں برطانیہ کے ایلسٹر براؤن لی نے طلائی تمغہ جیت لیا ہے۔ ریس کے اختتام پر مداحوں کے ایک ہجوم نے ان کا استقبال کیا۔ انہی کے بھائی جوناتھن براؤن لی نےاس ریس میں کانسی کا تمغہ حاصل کیا۔ سنہ دو ہزار کے سڈنی اولمپکس سے اولمپک مقابلوں میں شامل ٹرائی ایتھلون کھیل میں برطانیہ کے یہ پہلے تمغے ہیں۔

برطانیہ نے گھڑسواری میں ٹیم ڈریسج مقابلے میں بھی طلائی تمغہ جیتا ہے۔

آج مردوں کی ہاکی میں برطانیہ سپین کے خلاف آخری پول میچ کھیلے گا جبکہ آسٹریلیا نے پاکستان کو سات صفر سے شکست دے کر سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

ادھر چینی ایتھلیٹ اور سابق چیمپیئن یو ییئوں ایک سو دس میٹر کی ہرڈل ریس کے ہیٹ مقابلوں میں زخمی ہونے کی وجہ سے مقابلوں سے باہر ہو گئے ہیں۔ دو ہزار چار کے ایتھنز اولمپکس میں طلائی تمغہ جیتنے والے یو ییئوں کو فٹنس مسائل تو تھے مگر دو ہزار گیارہ میں ورلڈ چیمپیئن شپ میں دوسری پوزیشن کے بعد لگتا تھا کہ وہ اپنی بہترین فارم میں آ رہے ہیں۔


ہاکی: تمغے کی امید ختم

پاکستانی ٹیم کی پاسنگ بھی نہایت کمزور رہی اور ان کے پاس یا تو آسٹریلوی کھلاڑی روکتے رہے یا پھر وہ دوسرے پاکستانی کھلاڑیوں تک پہنچنے میں ہی ناکام رہے۔ سابق اولمپیئن اصلاح الدین

لندن میں جاری تیسویں اولمپکس میں ہاکی کے اہم میچ میں آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست کے بعد پاکستان کے ان اولمپکس میں ہاکی میں کوئی بھی میڈل حاصل کرنے کی امید ختم ہو گئی ہے۔

منگل کو پول اے کے اپنے آخری میچ میں آسٹریلیا نے پاکستان کو صفر کے مقابلے میں سات گول سے شکست دی۔

اس فتح کے نتیجے میں آسٹریلوی ٹیم نے سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا جبکہ گروپ کے دوسرے سیمی فائنلسٹ کا فیصلہ سپین اور برطانیہ کے مابین میچ کے نتیجے سے ہوگا۔

آسٹریلیا نے اس میچ کا آغاز جارحانہ انداز میں کیا اور پہلے ہاف کے اختتام تک چار گول کر دیے۔ دوسرے ہاف میں آسٹریلوی ٹیم نے مزید تین گول کیے اور سکور سات صفر رہا۔

آسٹریلیا کی جانب سے کرسٹوفر سیریلو نے دو جبکہ گلین ٹرنر، جیمی ڈوائر، رسل فورڈ، مارک نوئلز اور لیئم ڈی ینگ نے ایک ایک گول کیا۔

آسٹریلیا کی جانب سے میچ میں ایک گول پنلٹی سٹروک اور تین پنلٹی کارنرز پر ہوئے جبکہ پاکستانی ٹیم میچ میں ایک بھی پنلٹی کارنر حاصل نہ کر سکی۔

یہ اولمپکس مقابلوں کی تاریخ میں پاکستان کی ہاکی میں بدترین شکست ہے۔

کیمرون کے کھلاڑی غائب

غائب ہونے والوں میں پانچ باکسر بھی شامل ہیں

اولمپکس میں افریقی ملک کیمرون کے دستے کے اہلکاروں کا کہنا ہے کہ ان کے ملک سے تعلق رکھنے والے سات کھلاڑی برطانیہ میں غائب ہوگئے ہیں۔

برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز کےمطابق خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ پانچ باکسرز سمیت سات کھلاڑیوں نے معاشی مشکلات کی وجہ سے یورپ میں ہی رکنے کا فیصلہ کیا ہے۔

جون میں ایتھوپیا سے تعلق رکھنے والے اولمپک مشعل بردار پندرہ سالہ نیتنائل یمین بھی برطانیہ آ کر لا پتہ ہوگئے تھے۔ وہ ناٹنگھم میں اپنے ہوٹل سے غائب ہوئے تھے۔

کیمرون کے اولمپک دستے کے سربراہ ڈیوڈ اوجونگ نے کیمرون کی وزارتِ کھیل کو خط لکھ کر بتایا ہے کہ ’جو باتیں افواہوں کے طور پر شروع ہوئی تھیں، وہ آخر کار سچ ثابت ہوئیں‘۔

انہوں نے خط میں بتایا کہ لاپتہ ہونے والے کھلاڑیوں میں تیراک پال ئی کین ئی دنگے، خاتون فٹبالر دروسیل نگاکو اور پانچ باکسر تھامس ایسومبا، کرسچن ادجوفاک، عابدون میولی، بلیئز یپمو اور سرگے امبومو شامل ہیں۔


گیارہویں روز کی تصاویر

لندن اولمپکس: گیارہویں روز کے مناظر

اولمپکس میڈل ٹیبل



لائیو: اولمپکس 2012

اس مواد کو دیکھنے کے لیے آپ کے براؤزر کا جاوا سکرپٹ کو چلانا ضروری ہے

(BBC Sport Olympics (In English

لائیو: اولمپکس 2012

شروع ہونے والے ایونٹ

مقابلے آغاز
- -
- -
- -
- -
- -

مکمل شیڈول دیکھیں (انگریزی میں)

تازہ ترین - گولڈ میڈلسٹ

طلائی تمغے انٹرایکٹ کرنے کے لیے کرسر اس کے اوپر لائیں

0 302

میڈل ٹیبل

رینک طلائی تمغے چاندی کے تمغے کانسی کے تمغے

تمغوں کا مکمل ٹیبل دیکھیں

تفصیل

رینک
رینک طلائی تمغے چاندی کے تمغے کانسی کے تمغے

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔