اولمپکس: ریفری کے فیصلوں پر بھارتی تشویش

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 11 اگست 2012 ,‭ 18:44 GMT 23:44 PST

لندن اولمپکس میں باکسنگ کے بعد اب کُشتی کے مقابلوں میں بھی بھارت کی جانب سے ریفري کے فیصلوں پر ناراضگی اور تشویش ظاہر کی گئی ہے۔

پچپن کلوگرام کشتی مقابلے میں ہندوستانی پہلوان امت کمار کی شکست کے بعد بھارت کی کُشتی ٹیم کے لیڈر، راج سنگھ نے اولمپکس حکام سے اس مقابلے میں ریفري کے فیصلوں کے خلاف تحریری شکایت کی ہے۔

لندن میں موجود بی بی سی ہندی کے پنکج پريدرشي سے بات چیت میں انہوں نے کہا کہ انہیں یقین دلایا گیا ہے کہ ان کی شکایت پر غور کیا جائے گا.

وہیں سابق اولمپيئن اور ایشیائی کھیلوں میں طلائی تمغہ جیتنے والے ستپال سنگھ نے بی بی سی سے خصوصی بات چیت میں الزام عائد کیا ہے کہ لندن اولمپکس میں کشتی کے مقابلوں کے ریفري صحیح فیصلے نہیں کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سنیچر کے’مقابلے دیکھ کر مجھے ایسا لگا جیسے کہ یہ ریفري خرید لیے گئے ہیں، اب یہ سب پیشہ ور ہو گئے ہیں۔ ریفري اور جج کے بغیر آپ اب نہیں جیت سکتے‘۔

ستپال سنگھ کا کہنا ہے کہ کشتی میں پوائنٹس ملنے کا طریقہ ایسا ہے کہ اکثر ایک یا دو پوائنٹ سے جیت اور ہار کا فیصلہ ہو جاتا ہے، ایسے میں کھلاڑی کا مستقبل ریفري کے فیصلے پر بہت حد تک انحصار کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ لندن اولمپکس میں بھارت کی طرف سے کوئی بھی بین الاقوامی سطح کا ریفري نہیں ہے اور اس وجہ سے بھارتی کھلاڑیوں کے ساتھ ہونے والے برتاؤ پر آواز اٹھانےوالا کوئی نہیں ہے۔

جمعہ کو پہلوان امت کمار کی ہار کے لیے بھی انہوں نے کافی حد تک ریفري کے فیصلوں کو ہی ذمہ دار ٹھہرایا۔ ان کے مطابق کھیل میں امت کمار ہی حاوی تھے۔

انہوں نے کہا کہ ’جو تین پوائنٹ بلغاريہ کے حریف کو دیے گئے وہ دراصل امت کے تھے، وہیں سے ساری کشتی بدل گئی‘۔

سابق پہلوان ستپال سنگھ بیجنگ اولمپکس میں تمغہ جیتنے والے سشیل کمار کے کوچ تھے۔

ستپال سنگھ خود تین اولمپکس میں حصہ لے چکے ہیں اور انیس سو اسّی کے ماسکو اولمپکس میں انہوں نے پانچواں مقام حاصل کیا تھا۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔