بھارتی پہلوان کے لیے کانسی کا تمغہ

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یہ اولمپکس کی تاریخ میں کُشتی کے کھیل میں بھارت کے لیے تیسرا تمغہ ہے

لندن اولمپکس میں بھارتی پہلوان يوگیشور دت نے کانسی کا تمغہ جیت کر ان مقابلوں میں اپنے ملک کے تمغوں کی تعداد پانچ تک پہنچا دی ہے۔

انہوں نے سنیچر کو ساٹھ کلوگرام درجہ بندی کے مقابلے میں شمالی کوریا کے پہلوان کو شکست دے کر یہ تمغہ حاصل کیا۔

انتیس سالہ يوگشیور دت تیسری مرتبہ اولمپکس میں شریک ہو رہے ہیں تاہم یہ پہلا موقع ہے کہ وہ کوئی تمغہ جیتنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

اس فتح کے بعد انہوں نے بی بی سی ہندی کے پنکج پريدرشي سے بات چیت میں کہا، ’میں اس جیت سے بہت خوش ہوں۔ میں مسلسل تین اولمپکس سے تمغہ جیتنے کی کوشش کر رہا تھا۔ میرا مقابلہ اتار چڑھاؤ بھرا ضرور رہا لیکن مجھے یقین تھا کہ میں جيتوں گا ضرور‘۔

يوگیشور نے اپنی جیت کا کریڈٹ بھارتی عوام کی دعاؤں کو دیا اور کہا کہ وہ ان کے شكرگذار ہیں.

لندن اولمپکس کے لیے روانگی سے پہلے يوگیشور نے کہا تھا کہ یہ ان کا آخری اولمپکس ہوگا اور وہ اس کے لیے اپنی پوری جان لگا دیں گے۔

یہ اولمپکس کی تاریخ میں کُشتی کے کھیل میں بھارت کے لیے تیسرا تمغہ ہے۔ اس سے پہلے سنہ 1952 کے اولمپک کھیلوں میں بھارت کے كھشب جادھو نے اور 2008 کے بیجنگ اولمپکس میں سشیل کمار نے کانسی کا تمغہ جیتا تھا۔

اسی بارے میں