کیون پیٹرسن انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم سے باہر

آخری وقت اشاعت:  بدھ 22 اگست 2012 ,‭ 01:15 GMT 06:15 PST

اینڈی فلاور کا کہنا تھا کہ کیون پیٹرسن کا معاملہ اس میں ملوث تمام اطراف کے لیے ایک افسوس ناک موقع ہے

جنوبی افریقہ کے خلاف ایک روزہ سیریز اور آئندہ ماہ سری لنکا میں ہونے والے ٹی ٹوئنٹی عالمی کپ کے لیے انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم کا اعلان کر دیا گیا ہے جس میں شاندار کارکردگی کے باوجود بلے باز کیون پیٹرسن کو شامل نہیں کیا گیا۔

گزشتہ ہفتے بتیس سالہ پیٹرسن کو جنوبی افریقہ کے خلاف جاری ٹیسٹ سیریز کے تیسرے میچ کے لیے ٹیم سے نکال دیا گیا تھا جب انہوں نے دوسرے میچ کے دوران اپنی ہی ٹیم کے کھلاڑیوں اور انتظامیہ کے خلاف پیغامات حریف ٹیم کو بھیجے تھے۔

انگلینڈ یہ ٹیسٹ سیریز دو صفر سے ہار گیا اور آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں جنوبی افریقہ پہلے جبکہ انگلینڈ دوسرے نمبر پر آ گیا ہے۔

ٹیموں کے اعلان کے موقع پر قومی ٹیم کے سلیکٹر جیف ملر کا کہنا تھا کہ پیٹرسن کے مستقبل کے بارے میں ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے جس کی وجہ سے اس مرحلے پر ان کی ٹیم میں شمولیت پر غور نہیں کیا گیا۔

جمعے کو کاردف میں شروع ہونے والی پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز میں ٹی ٹوئنٹی کپتان سٹوئرٹ بروڈ کو بھی آئندہ ماہ ہونے والے ورلڈ کپ کے پیشِ نظر آرام کا وقت دیا گیا ہے۔

جیف ملر کا کہنا تھا کہ ان کے خیال میں بروڈ کو دو ہفتوں کے لیے کرکٹ نہ کھیلنے سے انہیں اور ٹیم دونوں کو فائدہ پہنچے گا۔

مئی میں کیون پیٹرسن نے بین الاقوامی سطح پر ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لی تھی تاہم بعد میں انہوں نے یہ فیصلہ واپس لے لیا۔

جنوبی افریقہ میں پیدا ہونے والے پیٹرسن اس انگلینڈ ٹیم کا ایک اہم حصے تھے جس نے دو سال قبل ٹی ٹوئنٹی کا عالمی کپ جیتا تھا۔

انگلینڈ کے کوچ اینڈی فلاور کا کہنا تھا کہ کیون پیٹرسن کا معاملہ اس میں ملوث تمام اطراف کے لیے ایک افسوس ناک موقع ہے۔

انہوں نے سکائی سپورٹس ٹی وی کو بتایا کہ البتہ پیٹرسن نے گزشتہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا تاہم اس وقت ایسے حالات ہیں کہ انہیں ٹیم میں شامل نہیں کیا جا سکتا۔

انگلینڈ کے کپتان ایڈرو سٹرائوس کے بیان کی تائید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس وقت کیون پیٹرسن کے حوالے سے اعتماد اور باہمی احترام کے معاملات کو حل کرنا زیادہ ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ واضح رہے کہ یہ صرف کپتان اور پیٹرسن کے مابین اح،لافات نہیں ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔