ڈارلنگ آف بنگلہ دیشی کرکٹ

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 28 ستمبر 2012 ,‭ 17:30 GMT 22:30 PST

ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کی کاررکردگی ثقلین مشتاق کے لیے خاصی تکلیف دہ تھی جو مختصر معاہدے پر اس کے بالنگ کوچ کی ذمہ داری نبھا رہے ہیں لیکن نیوزی لینڈ اور پاکستان کے خلاف دونوں گروپ میچوں میں شکست کے باوجود وہ بنگلہ دیشی کرکٹ خاص کر اسپن بالنگ کا روشن مستقبل دیکھ رہے ہیں۔

بنگلہ دیشی ٹیم سے ثقلین مشتاق کی مختصر وابستگی کو وہاں کا میڈیا مثبت انداز میں دیکھ رہا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ ان کا وسیع تجربہ ٹیم کے بہت کام آسکتا ہے۔ جتنی محنت سے وہ بالرز اور بلے بازوں کے ساتھ کام کر رہے ہیں اس نے انہیں ٹیم میں خاصا مقبول بنا دیا ہے اور ایک بنگلہ دیشی صحافی کے مطابق وہ اس وقت بجا طور پر ٹیم کے ڈارلنگ ہیں۔

ثقلین مشتاق سے بات ہوئی تو وہ کہنے لگے کہ انہیں بنگلہ دیشی ٹیم کے ساتھ کام کرتے ہوئے مزا آ رہا ہے۔ ٹیم کے کھلاڑیوں میں سیکھنے کا جذبہ موجود ہے۔ وہ خود ہر بالر اور بلے باز پر محنت کر رہے ہیں بالرز کو یہ بتاتے ہیں کہ بلے باز کی کیا کمزوری ہے جس پر اسے اٹیک کرنا ہے جبکہ بلے باز کو وہ یہ بتاتے ہیں کہ بالر کی حکمت عملی کو اس نے کس طرح غیرموثر بنانا ہے۔

سب سے اہم بات جو ثقلین مشتاق کی کوچنگ میں نظرآئی وہ یہ کہ نیٹ پریکٹس میں انہوں نے ہر بلے باز کو خود بالنگ کروائی اور کئی بار تو ایسا بھی ہوا کہ بلے باز انہیں کھیل نہ سکے۔

میری اس بات پر کہ آتش ابھی بھی جوان ہے ثقلین مشتاق نے قہقہ لگایا اور کہا کہ وہ ابھی بھی کلب کرکٹ کھیلتے رہتے ہیں خود کو فٹ رکھنے کی کوشش کرتے ہیں اور کوچنگ میں وہی کامیاب ہے جو خود عملی طور پر اپنے کھلاڑیوں کو کام کر کے دکھائے۔

ثقلین کا کہنا ہے کہ بنگلہ دیش میں کرکٹ کا جنون ہے اور وہاں کرکٹ کا ڈھانچہ بہت انداز میں موجود ہے وہاں اکیڈمی ہے اور انہیں کئی باصلاحیت بالرز نظر آئے ہیں جن پر وہ کام کرنا چاہتے ہیں تاکہ ان کی صلاحیتیں بھرپور انداز میں سامنے آئیں۔

ثقلین مشتاق کا نام آتے ہی ذہن میں گیند ’ دوسرا‘ آجاتی ہے جسے انہوں نے متعارف کرایا تھا تو اب جبکہ ہر آف اسپنر ’ دوسرا‘ کواپنا ہتھیار بنا چکا ہے تو کیسا لگتا ہے؟۔ اس سوال پر ثقلین مشتاق نے کہا کہ ظاہر ہے انہیں بہت خوشی ہوتی ہے کہ جو گیند انہوں نے متعارف کرائی اسے کئی بالرز اپنی کامیابی کے لیے استعمال میں لائے ہیں۔ وہ چاہے مرلی دھرن ہوں یا سعید اجمل، ہربھجن ہوں یا گریم سوان انہیں اس کی خوشی ہے کہ دوسرا کے ذکر پر ان کا نام ضرور آتا ہے۔

آف اسپن بالنگ کا مستقبل کیا ہے؟۔ ثقلین کہتے ہیں کہ مستقبل روشن ہے تاہم ابھی بھی اسپن بالنگ کے کئی پہلو اجاگر ہونے باقی ہیں کئی نئی چیزیں سامنے آئیں گی اور وہ صرف اسی صورت میں ممکن ہے جب بالرز سخت محنت کریں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔