ڈوپنگ:عبدالرحمان تین ماہ کے لیے معطل

آخری وقت اشاعت:  بدھ 3 اکتوبر 2012 ,‭ 13:40 GMT 18:40 PST

انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ نے انگلش کاؤنٹی سمر سیٹ کی نمائندگی کرنے والے پاکستان کے لیفٹ آرم سپنر عبدالرحمن کو ممنوعہ ادویات کے استعمال کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد بارہ ہفتوں کے لیے معطل کر دیا ہے۔

اس بات کا اعلان انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ نے بدھ کو کیا۔

خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق بتیس سالہ لیفٹ آرم سپنر عبدالرحمن کا منشیات کے استعمال کا ٹیسٹ آٹھ اگست کو انگلینڈ میں جاری کاؤنٹی چیمپئین شپ میں ناٹنگھم شائر کے خلاف کھیلے جانے والے میچ کے دوران لیا گیا۔

انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کے مطابق پاکستانی بالر عبدالرحمن اکیس دسمبر سنہ دو ہزار بارہ تک کاؤنٹی چیمپئین شپ کے میچوں میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

اس کے علاوہ وہ جنوبی افریقہ میں ہونے والے چیمپئنز لیگ ٹی ٹوئنٹی میں سیالکوٹ کی نمائندگی بھی نہیں کر سکیں گے۔

دوسری جانب انگلش کاؤنٹی سمر سیٹ کاؤنٹی کے چیف ایگزیکٹو گے لیوینڈر نے کہا ہے کہ کاؤنٹی انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کے فیصلے کی تائید کرتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ان کا کلب غیر قانونی منشیات کے استعمال کو کسی بھی صورت نظر انداز نہیں کر سکتا اور کھلاڑیوں کو اس پالیسی کے بارے میں باقاعدگی سے آگاہ کیا جاتا ہے۔

واضح رہےکہ عبدالرحمن نے گزشتہ سال جنوری میں انگلینڈ کے خلاف دبئی میں ہونے والی تین ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز میں انیس وکٹیں حاصل کی تھیں اور پاکستان نے اس سیریز میں انگلینڈ کے خلاف کلین سوئیپ کیا تھا۔

عبدالرحمن پاکستان کی جانب سے کھیلتے ہوئے ٹیسٹ میچوں میں اٹھائیس رنز کی اوسط سے اکاسی وکٹیں حاصل کر چکے ہیں۔

"سپنر عبدالرحمن کا انگلینڈ میں ممنوعہ ادویات کے استعمال کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد عبدالرحمن کو جنوبی افریقہ میں نو اکتوبر سے شروع ہونے والی چیمپئن لیگ میں سیالکوٹ سٹالینز کی نمائندگی کرنے سے روک دیا ہے"

پاکستان کرکٹ بورڈ

ادھر پاکستان کے لیفٹ آرم سپنر عبدالرحمن نے ایک بیان میں پاکستان کرکٹ بورڈ، انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ، سمر سیٹ کاؤنٹی کرکٹ کلب، اپنے ساتھیوں، پرستاروں اور خاندان سے معافی مانگی ہے۔

انہوں نے کہا ’ وہ ایک لمحہ ایک غلطی تھی جس کی مجھے بھاری قیمت ادا کرنی پڑی۔‘

ان کا کہنا تھا کہ وہ معطلی کے دوران فٹ رہنے کی کوشش کریں گے۔

خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے منگل کو ایک بیان میں کہا ہے کہ سپنر عبدالرحمن کا انگلینڈ میں ممنوعہ ادویات کے استعمال کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد عبدالرحمن کو جنوبی افریقہ میں نو اکتوبر سے شروع ہونے والی چیمپئن لیگ میں سیالکوٹ سٹالینز کی نمائندگی کرنے سے روک دیا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ایک سینئیر اہلکار نے خبر رساں ایجنسی رائٹرز کو بتایا کہ انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ کی جانب سے انہیں بتایا گیا کہ سپنر عبدالرحمن کا ممنوعہ ادویات کے استعمال کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے جس کے بعد بورڈ نے انہیں جنوبی افریقہ میں نو اکتوبر سے شروع ہونے والی ٹی ٹوئنٹی کوالیفائنگ چیمپئین شپ میں سیالکوٹ سٹالینینز کی ٹیم سے نکال دیا ہے۔

کرکٹ بورڈ کے اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی صورت میں خبر رساں ایجنسی رائٹرز کو بتایا کہ بورڈ نے انگلینڈ اور ویلز کرکٹ بورڈ سے اس معاملے پر مزید تفصیلات طلب کی ہیں۔

انہو ں نے کہا کہ بورڈ عبدالرحمن پر عائد کی جانے والی پابندی کی حمایت کرے گا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔