ملک کوکوچ مقرر کرنے کا ارادہ نہیں: پی سی بی

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 27 اکتوبر 2012 ,‭ 14:36 GMT 19:36 PST

مجھ سے تمام پابندیاں اٹھ چکی ہیں اور اب میں کرکٹ کےمعاملات میں شامل ہو سکتا ہوں: سلیم ملک

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ذکا اللہ نے واضح کیا ہے کہ بورڈ سابق کپتان سلیم ملک کو قومی کرکٹ ٹیم کا بیٹنگ کوچ مقرر کرنے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتا۔

سلیم ملک نے قومی ٹیم کے بیٹنگ کوچ کی اسامی کے درخواست دے رکھی ہیں۔ سلیم ملک جنہیں اپنے کیریئر کے دور میچ فکسنگ کے الزامات کا سامنا رہا ہے۔

جسٹس ملک قیوم کی رپورٹ کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے سلیم ملک پر پابندی عائد کر دی تھی لیکن آٹھ سال بعدپاکستان عدالتوں نے سلیم ملک سے پابندی ہٹا دی گئی تھی۔

سلیم ملک کا کہنا ہے کہ پاکستانی عدالتوں نے ان پر لگی پابندیوں کو ختم کر دیا ہے اور وہ بیٹنگ کوچ کی اسامی کے لیے کوالیفائی کرتے ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے صدر نے کہا ہے کہ بورڈ نے کوالیفائیڈ کوچ رکھنے کا فیصلہ کیا ہے اور ہم صرف ان لوگوں کو بیٹنگ کوچ کی اسامی کے لیے غور کر یں گے جو قابلیت کے معیار پر پورا اترتے ہوں۔

سلیم ملک ایک مرتبہ پہلے بھی پی سی بی کے زیرِ انتظام چلنے والی نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں عہدہ حاصل کرنے کے قریب تھے لیکن آئی سی سی کی مداخلت کی وجہ سے پاکستان کرکٹ بورڈ نے انہیں کوچ مقرر کرنے سے اجتناب کیا تھا۔

سلیم ملک نے قومی کرکٹ ٹیم کے بیٹنگ کوچ کے لیے درخواست دینے کے بعد صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اور آئی سی سی انہیں انہیں کلیئر کر چکے ہیں اور اب وہ کرکٹ کے معاملات میں شامل ہو سکتے ہیں۔

سلیم ملک نے ایک سو تین ٹیسٹ میچ اور دو سو تراسی میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کی ہے۔ سلیم ملک نے بارہ ٹیسٹ میچوں میں پاکستان کی کپتانی بھی کی ہے۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔