کک کی سنچری مگر میچ بھارت کی گرفت میں

آخری وقت اشاعت:  اتوار 18 نومبر 2012 ,‭ 11:03 GMT 16:03 PST

الیسٹر کک نے ڈیڑھ سو رنز مکمل کر لیے ہیں

بھارت کے خلاف احمدآباد میں جاری پہلے کرکٹ ٹیسٹ میچ میں انگلش ٹیم کپتان الیسٹر کک کی عمدہ بلے بازی کی بدولت اننگز کی شکست سے دوچار ہونے سے بچنے میں کامیاب رہی ہے تاہم میچ پر اب بھی بھارت کی گرفت مضبوط ہے۔

چوتھے دن کے کھیل کے اختتام پر انگلینڈ نے دوسری اننگز میں پانچ وکٹ کے نقصان پر تین سو چالیس رنز بنائے ہیں اور یوں اسے بھارت پر دس رنز کی برتری حاصل ہوئی ہے۔

کلِک تفصیلی سکور کارڈ

الیسٹر کک نے میچ کے چوتھے دن اپنی سنچری مکمل کی اور جب کھیل ختم ہوا تو وہ ایک سو اڑسٹھ رنز بنا کر کریز پر موجود تھے جہاں ان کا ساتھ میٹ پرائر دے رہے ہیں۔ ان دونوں بلے بازوں کے درمیان چھٹی وکٹ کے لیے ایک سو اکتالیس رنز کی شراکت ہو چکی ہے۔

اتوار کو انگلینڈ نے بغیر کسی نقصان کے ایک سو گیارہ رنزسے اپنی دوسری اننگز دوبارہ شروع کی تو بارہ رن کے اضافے کے بعد اسے نک کامپٹن کی وکٹ کی صورت میں پہلا نقصان اٹھانا پڑا۔ انہیں ظہیر خان نے ایل بی ڈبلیو کیا۔

دوسری انگلش وکٹ 156 کے سکور پر اس وقت گری جب جوناتھن ٹروٹ کو پرگیان اوجھا نے دھونی کے ہاتھوں کیچ کروا دیا۔ چار رن بعد اوجھا نے ہی کیون پیٹرسن کو بولڈ کر کے اپنی ٹیم کو تیسری کامیابی دلوائی۔

انگلینڈ کی چوتھی اور پانچویں وکٹ 199 کے سکور پر گری جب امیش یادو نے لگاتار دو گیندوں پر ایئن بیل اور سمت پٹیل کو پویلین کی راہ دکھلائی۔

سمت پٹیل امپائر کے غلط فیصلے کا نشانہ بنے اور انہیں اس وقت ایل بی ڈبلیو قرار دیا گیا جب ری پلے میں گیند واضح طور پر ان کے بلے سے ٹکراتی دکھائی دے رہی تھی۔

اس میچ میں بھارت نے اپنی پہلی اننگز آٹھ وکٹوں کے نقصان پر پانچ سو اکیس رنز بنا کر ڈیکلئیر کر دی تھی۔ اس اننگز کی خاص بات چیتیشور پجارا کی ناقابلِ شکست ڈبل سنچری اور وریندر سہواگ کی طوفانی سنچری تھی۔

اس کے جواب میں انگلش بلے باز بھارتی سپنرز کا مقابلہ کرنے میں بری طرح ناکام رہے اور پوری ٹیم صرف 191 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

انگلینڈ کو فالو آن کرانے میں بھارتی بولر پرگیان اوجھا نے اہم کردار ادا کیا۔ انہوں نے پینتالیس رنز دے کر پانچ کھلاڑی آؤٹ کیے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔