’جارحانہ انداز اپنانے والی ٹیم جیتے گی‘

آخری وقت اشاعت:  اتوار 16 دسمبر 2012 ,‭ 13:13 GMT 18:13 PST
انضمام الحق

انضمام الحق کو حال ہی میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے پاکستان کی کرکٹ ٹیم کا بیٹنگ کنسلٹنٹ مقرر کیا ہے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان انضمام الحق کا کہنا ہے کہ پاک بھارت سیریز میں وہی ٹیم کامیاب ہو گی جو جارحانہ کرکٹ کھیلے گی۔

انضمام الحق کو حال ہی میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے پاکستان کی کرکٹ ٹیم کا بیٹنگ کنسلٹنٹ مقرر کیا ہے۔

انہوں نے سنیچر کو بھارت کے دورے کے لیے لگائے گئے پاکستانی ٹیم کے تربیتی کیمپ میں کھلاڑیوں کو بلے بازی کے گر سکھائے۔

انضمام الحق کا کہنا ہے کہ پاکستان کے بلے بازوں کی بلے بازی میں کچھ تکنیکی خامیاں ہیں لیکن اس کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ پاکستان کی ٹیم کو بین الاقوامی تجربہ نسبتاً کم ہے تاہم اگر وہ زیادہ کرکٹ کھیلیں گے تو یہ کمزوریاں بھی دور ہو سکتی ہیں۔

پاک بھارت سیریز کی بابت ان کا کہنا تھا کہ ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں پیش گوئی ممکن نہیں اور خاص طور پاک بھارت سیریز ہو تو کسی کو بھی فیورٹ نہیں قرار دیا جا سکتا، کیونکہ بھارتی ٹیم بھی پاکستان کےخلاف جذبے سے کھیلتی ہے، تاہم پاکستان کی ٹیم ایسی ہے کہ اگر تمام تر توجہ کھیل پر مرکوز رکھے تو جیت سکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ یہ بات اس لیے کہہ سکتے ہیں کیونکہ ماضیِ قریب میں پاکستان نے آسٹریلیا کے خلاف اور ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں اچھی کارکردگی دکھائی ہے اور وہ بھارت کو دبا‎ؤ میں لا سکتی ہے۔

انضمام الحق نے مزید کہا کہ پاکستان کے پاس ایسے کھلاڑی ہیں جو انفرادی کارکردگی سے میچ جتانے میں مدد گار ثابت ہو سکتے ہیں لیکن چونکہ یہ ٹیم گیم ہے اس لیے اگر پوری ٹیم بیٹنگ، بالنگ، اور فیلڈنگ میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی تو اچھے نتائج دے سکتی ہے۔

انضمام الحق نے کہا کہ جب پاکستان کی ٹیم کوسال کے دس سے بارہ ٹیسٹ میچز کھیلنے کو ملیں گے تو پاکستانی بلے بازوں کی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کی وجہ سے پیدا ہونے والی خامیاں دور ہو جائیں گی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔