سنسنی خیز مقابلے کے بعد پاکستان کی فتح

آخری وقت اشاعت:  منگل 25 دسمبر 2012 ,‭ 16:58 GMT 21:58 PST
تصویر بشکریہ بی بی سی آئی

شعیب ملک نے ستاون رنز کی شاندار اننگز کھیلی

بنگلور میں پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ میں پاکستان نے بھارت کو پانچ وکٹوں سے شکست دے کر دو میچوں کی سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کر لی ہے۔

چنا سوامی سٹیڈیم میں کھیلے جانے والے میچ میں پاکستان کو فتح کے لیے ایک سو چونتیس رنز کا ہدف ملا جو اس نے محمد حفیظ اور شعیب ملک کی عمدہ بلے بازی کی بدولت آخری اوور میں حاصل کر لیا۔

کلِک میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

آخری اوور میں پاکستان کو فتح کے لیے دس رن درکار تھے اور شعیب ملک نے چھکا لگا کر ٹیم کو فتح دلوائی۔ انہوں نے ستاون رنز کی ناقابلِ شکست اننگز کھیلی۔

پاکستان کی جانب سے احمد شہزاد اور ناصر جمشید نے اننگز شروع کی تو اپنا پہلا انٹرنیشنل میچ کھیلنے والے بھوونیشور کمار نے پہلے اوور کی آخری گیند پر ناصر جمشید کو بولڈ کر دیا۔

بھوونیشور کمار نے ہی اپنے دوسرے اوور میں احمد شہزاد کو وکٹوں کے پیچھے کیچ کروا کر بھارت کو دوسری کامیابی دلوائی۔ اسی اوور میں انہوں نے عمر اکمل کو بھی کلین بولڈ کر دیا۔

انہوں نے اپنے مقررہ چار اوورز میں صرف نو رنز کے عوض تین وکٹیں حاصل کیں۔

پاکستان بمقابلہ بھارت

اس میچ سے قبل انٹرنیشنل ٹی ٹوئنٹی مقابلوں میں پاکستان اور بھارت تین مرتبہ مدِمقابل آ چکے تھے اور تینوں مرتبہ جیت بھارت کی ہی ہوئی تھی۔آخری مرتبہ دونوں ٹیمیں کولمبو میں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی مقابلوں کے دوران آمنے سامنے آئی تھیں اور بھارت نے یہ میچ آٹھ وکٹوں سے جیت لیا تھا۔

اس موقع پر محمد حفیظ اور شعیب ملک نے ٹیم کو سنبھالا اور چوتھی وکٹ کے لیے ایک سو چھ رنز کی شراکت قائم کی۔ محمد حفیظ اکسٹھ رنز بنا کر ایشانت شرما کی گیند پر کیچ ہوئے۔

پاکستان کے آؤٹ ہونے والے پانچویں بلے باز کامران اکمل تھے جنہیں اشوک ڈنڈا نے کیچ کروایا۔

بھارت کی جانب سے بھوونیشور کمار نے تین جبکہ ایشانت شرما اور اشوک ڈنڈا نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے قبل پاکستان نے ٹاس جیت کر میزبان ٹیم کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی اور بھارت نے مقررہ بیس اوورز میں نو وکٹوں کے نقصان پر ایک سو تینتیس رنز بنائے۔

بھارتی اوپنرز گوتم گمبھیر اور اجانکا ریہانے نے اپنی ٹیم کو ستتر رنز کا آغاز فراہم کیا اور ایک موقع پر ایسا لگ رہا تھا کہ بھارت ایک بڑا سکور کرے گا لیکن اوپنرز کے آؤٹ ہونے کے بعد آنے والے بھارتی بلے باز قابلِ ذکر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے میں ناکام رہے۔

گمبھیر تینتالیس رنز کے ساتھ سب سے کامیاب بلے باز رہے جبکہ ریہانے نے بیالیس رنز بنائے۔

محمد عرفان نے اپنی تیز رفتار سے بھارتی بلے بازوں کو خاصا پریشان کیا

پاکستان کی جانب سے عمرگل نے تین، سعید اجمل نے دو جبکہ شاہد آفریدی اور محمد عرفان نے ایک ایک وکٹ لی۔ پاکستانی کھلاڑیوں نے اچھی فیلڈنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے دو کھلاڑیوں کو رن آؤٹ بھی کیا۔

یہ پہلا موقع تھا کہ پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں بھارتی سرزمین پر کسی ٹی ٹوئنٹی میچ میں مدِمقابل تھیں۔

یہ دو ہزار سات کے بعد پہلا موقع ہے کہ پاکستانی ٹیم کرکٹ سیریز کھیلنے کے لیے بھارت پہنچی ہے۔ نومبر سنہ دو ہزار آٹھ کے ممبئی حملوں کے بعد پاکستان کرکٹ ٹیم کا دورۂ بھارت منسوخ کر دیا گیا تھا۔

پچیس دسمبر سے چھ جنوری تک جاری رہنے والی اس سیریز میں دو ٹی ٹوئنٹی اور تین ایک روزہ میچ کھیلے جائیں گے۔ پاکستان نے اب تک بھارت میں چار ایک روزہ سیریز میں حصہ لیا ہے اور ان میں سے دو میں وہ فتح یاب رہا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔