ایزارنکا آسٹریلین اوپن کی فاتح

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 26 جنوری 2013 ,‭ 12:26 GMT 17:26 PST

اس مقابلے میں کامیابی کے بعد یہ ایزارنکا کی گرینڈ سلیم میں دوسری فتح ہے

بیلاروس کی وکٹوریہ ایزارنکا نے ملبورن میں چین کی لی نا کو ہرا کر آسٹریلین اوپن کے فائنل میں اپنے اعزاز کا ایک بار پھر دفاع کیا ہے۔

اس کے ساتھ ساتھ بیلاروس کی وکٹوریہ ایزارنکا نے اپنے عالمی نمبر ایک کا اعزاز بھی برقرار رکھا ہے۔

بیلاروس کی تئیس سالہ کھلاڑی نے میلبرن کے روڈ لیور ارینا میں کھیلے جانے والے اس مقابلے میں اپنی حریف کو چار۔چھ، چھ۔چار اور چھ تین سے شکست دی۔

میچ کے دوران چین کی لی نا دو مرتبہ گریں اور اپنی کلائی پر چوٹ لگوائی اور ان کا سر بھی زور سے زمین پر لگا۔

اس مقابلے میں کامیابی کے بعد یہ ایزارنکا کی گرینڈ سلیم میں دوسری فتح ہے۔

اپنی فتح کے بعد ایزارنکا نے کہا کہ ’میں بہت کچھ کہنا چاہوں گی مگر اپنی بات کو مختصر رکھوں گی‘ کچھ توقف کے بعد انہوں نے کہا کہ ’آسٹریلیا کا قومی دن مبارک ہو‘۔

جمعرات کو میلبرن میں پہلے سیمی فائنل میں لی نا نے روس کی ماریا شراپووا کو سٹریٹ سیٹس میں شکست دی تھی۔

تیس سالہ لی نا نے یہ میچ چھ دو اور چھ دو سے باآسانی جیتا تھا۔ اس ٹورنامنٹ کے لیے سیڈنگ میں لی نا کو چھٹا اور شراپووا کو دوسرا درجہ دیا گیا تھا۔

لی نا وہ پہلی چینی ٹینس کھلاڑی ہیں جو کسی گرینڈ سلام ٹینس ٹورنامنٹ کا فائنل کھیلنے کا اعزاز رکھتی ہیں۔

وہ دو ہزار گیارہ میں بھی آسٹریلین اوپن کے فائنل میں پہنچی تھیں لیکن وہاں انہیں کم کلائسٹر کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔