ویسٹ انڈیز کے خلاف آسٹریلیا کا کلین سوئپ

آخری وقت اشاعت:  اتوار 10 فروری 2013 ,‭ 07:25 GMT 12:25 PST

ووگز نے دس چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے ایک سو بارہ رنز بنائے, انھیں مین آف دی میچ قرار دیا گیا

میلبورن میں سیریز کے پانچویں اور آخری ایک روزہ میچ میں آسٹریلیا نے ویسٹ انڈیز کو سترہ رن سے شکست دے کر سیریز پانچ صفر سے جیت لی ہے۔

آسٹریلیا نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے ویسٹ انڈیز کو فتح کے لیے 275 رنز کا ہدف فراہم کیا تھا۔

کلِک تفصیلی سکور کارڈ

اس میچ میں ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تو اس نے خراب آغاز کے باوجود مقررہ پچاس اوورز میں پانچ وکٹوں پر دو سو چوہتر رنز بنائے۔

آسٹریلیا کے ایڈم ووگز کو ان کی بہترین سنچری کے لیے مین آف دی میچ کے اعزاز سے نوازا گیا جبکہ آسٹریلیا کے ہی ایم اے سٹارک کو مین آف دا سیریز کا اعزاز دیا گیا۔ وہ اس میچ میں نہیں کھیل رہے تھے۔

آسٹریلیا کی جانب سے اس میچ میں کپتانی کرنے والے شین واٹسن نے کہا کہ وہ اس جیت سے بہت خوش ہیں اور وہ اسی خوشی میں بھارت کے لیے روانہ ہونا چاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ بائیس فروری سے آسٹریلیا بھارت میں ٹیسٹ سریز کھیلنے آ رہی ہے۔ ابھی اسے ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹی ٹوئنٹی میچ بھی کھیلنا ہے۔

جواب میں ویسٹ انڈیز کی شروعات بھی اچھی نہیں رہی لیکن ان کے ایک اوپنر نے سنچری سکور کی۔ ایک وقت پانچ وکٹ پر ویسٹ انڈیز کا سکور 228 رنز پہنچ چکا تھا اور ایسا لگنے لگا تھا کہ شاید ویسٹ انڈیز وائٹ واش سے بـچ جائے لیکن پھر یکے بعد دیگرے وکٹ کرنے شروع ہوئے اور پوری ٹیم ایک گیند قبل ہی 257 رنز پر سمٹ گئی۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے جانسن چارلز نے سو رنز بنائے جبکہ کیرون پولارڈ نے پینتالیس اور ڈیرن براوؤ نے 33 رنز بنائے۔ ان کے علاوہ کوئی بھی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کر سکا۔

آسٹریلیا کی جانب سے کلنٹ میکے اور مچل جانسن نے تین تین وکٹ لیے جبکہ کٹنگ، فاکنر اور ڈورتھی کو ایک ایک وکٹ ملی۔

اس سے قبل پہلے اننگز میں آسٹریلیا کو ابتداء میں ہی دو وکٹوں کا نقصان اٹھانا پڑا تھا۔

گزشتہ میچوں میں شاندار بلے بازی کرنے والے شین واٹسن ٹینو بیسٹ کی پہلی ہی گیند پر بولڈ ہوئے تو بیسٹ نے ہی فنچ کو کیچ کروا کر اپنی ٹیم کو دوسری کامیابی دلوائی۔

اس موقع پر فل ہیوز اور شان مارش نے ٹیم کو سہارا دیا اور ساٹھ رنز کی اہم شراکت قائم کی۔

ان کے آؤٹ ہونے کے بعد ووگز نے کمان سنبھالی اور سنچری بنا کر آسٹریلیا کو ایک بڑے مجموعے تک پہنچنے میں مدد دی۔

انہوں نےایک سو چھ گیندوں پر دس چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے ایک سو بارہ رنز کی اننگز کھیلی اور آؤٹ نہیں ہوئے۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے ٹینو بیسٹ اور ڈوین براوو نے دو، دو جبکہ کیمار روچ نے ایک وکٹ حاصل کی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔