سپین: بُل فائٹنگ کی خصوصی ثقافتی حیثیت

آخری وقت اشاعت:  بدھ 13 فروری 2013 ,‭ 01:07 GMT 06:07 PST

سپین میں اب بھی بْل فائٹنگ کے سالانہ دہ ہزار مقابلے ہوتے ہیں لیکن ان مقابلوں کی تعداد بتدریج کم ہوتی جا رہی ہے

سپین میں اراکینِ پارلیمان نے ملک کے روایتی کھیل بُل فائٹنگ یا بیل کی لڑائی کو خصوصی ثقافتی حیثیت دینے کے لیے ووٹ ڈالے ہیں جس سے علاقائی سطح پر اس پرانے کھیل پر لگائی گئی پابندیاں ختم ہو سکتی ہیں۔

سپین کے پارلیمان نے 40 کے مقابلے 180 ووٹوں سے اس درخواست کو پاس کیا جس پر تقریباً پانچ لاکھ نوے ہزار افراد نے دستخط کیے تھے۔

اس درخواست کو منگل کو پارلیمان میں بڑی آسانی سے پاس کرایا گیا کیونکہ پارلیمان میں حکمران قدامت پسند جماعت پاپولر پارٹی کی اکثریت ہے۔

اگر یہ درخواست قانون بن جاتی ہے تو اس سے سپین کے کتالونیا اور جزائر کنیری کے علاقوں میں بُل فائٹنگ پر عائد پابندیاں ختم ہو جائیں گی۔

اس منصوبے کے تحت حکام بُل فائٹنگ کے فروغ کے لیے کام کریں گے اور اقوامِ متحدہ سے بُل فائٹنگ کو سپین کے ثقافتی ورثے کے دور طور پر منوانے کے لیے کوشش کریں گے۔

پارلیمان کا ایک کیمشن اس تجویز کردہ قانون کے مسودے کو صحیح طریقے سے تیار کرے گا۔ اور توقع ہے کہ اس قانون پر ووٹنگ سال کے اختتام تک ہو۔

اس قانون کے تحت بُل فائٹنگ کو فروغ دینے والوں کو ٹیکس کی چھوٹ بھی مل جائے گی۔

بی بی سی کے ٹام بیوریج کا کہنا ہے کہ بُل فائٹنگ کے حمایتی قدامت پسندوں کی طرف سے پارلیمان میں ووٹنگ کا مقصد اس پرانی روایت کو زندہ رکھنا ہے۔

دوسری طرف بُل فائٹنگ کے رواج کے مخالفین کا موقف ہے کہ جانور کو قتل کرنا وحشیانہ فعل ہے۔

سپین میں اب بھی بُل فائٹنگ کے سالانہ دہ ہزار مقابلے ہوتے ہیں لیکن ان مقابلوں کی تعداد بتدریج کم ہوتی جا رہی ہے۔

ملک کے شمال مشرقی علاقے کتالونیہ میں بُل فائٹنگ کو وحشیانہ قرار دے کر اس پر گذشتہ سال پابندی لگائی گئی تھی۔

کتالونیہ میں بُل فائٹنگ پر پابندی کو سپین کے اکثر باشندوں نے کتالون قوم پرستوں کی طرف سے اپنے آپ کو سپین کے روایات سے منفرد کرنے کی کوشش کے طور پر دیکھا۔

یاد رہے کہ سپین کے کینری جزائر میں بُل فائٹنگ پر 1991 میں پابندی عائد کی گئی تھی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔