پیرالمپیئن پر گرل فرینڈ کو گولی مار کر ہلاک کرنے کا الزام

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 14 فروری 2013 ,‭ 08:52 GMT 13:52 PST

پسٹوریئس کو جنوبی افریقہ میں قومی ہیرو کی حیثیت حاصل ہے

جنوبی افریقہ کی پولیس نے اپنے ملک کے معروف پیرالمپک ایتھلیٹ آسکر پسٹوریئس کو اپنی کی گرل فرینڈ ریوا سٹین کیمپ کو گولی مار کر ہلاک کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔

پولیس نےاس بات کی تصدیق کی ہے کہ انھوں نے اس سلسلے میں ایک 26 سالہ شخص کو حراست میں لے رکھا ہے، اور تفتیش جاری ہے۔

پولیس نے جمعہ تک عدالت میں پیش کرنے سے پہلے آسکر پسٹوریئس کا نام ظاہر نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ وہ اس بارے میں عینی شاہدین سے پوچھ تاچھ کر رہے ہیں اور یہ کہ وہ ضمانت پر رہائی کی اپیل کی مدافعت کریں گے۔

اس وقوعے کے تفصیلات ابھی نہیں آئیں۔ رپورٹوں کے مطابق ممکن ہے کہ ایتھلیٹ نے اپنی گرل فرینڈ کو چور سمجھ لیا ہو۔

مس سٹین کیمپ کے پبلسسٹ نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے انتیس سالہ ماڈل سٹین کیمپ کی موت کی تصدیق کی ہے۔

پبلیسسٹ سارٹ ٹوملنسن نے کہا: 'جو بھی انہیں جانتاتھا وہ اشک بار ہے۔ وہ پورے طور سے ایک فرشتہ صفت، انتہائی سوئیٹ انتہائی خلیق اور رحمدل انسان تھیں۔'

پسٹوریئس کو ’بلیڈ رنر‘ کہا جاتا ہے اور وہ دونوں ٹانگوں سے محروم واحد ایتھلیٹ ہیں جنھوں نے اولمپکس میں حصہ لیا ہے۔

کیپ ٹاؤن میں بی بی سی کے نامہ نگار پیٹر بائلز کہتے ہیں کہ اس خبر نے ملک بھر کو چونکا کر رکھ دیا ہے کیوں کہ پسٹوریئس کو جنوبی افریقہ کے قومی ہیروؤں میں شمار کیا جاتا ہے۔

یہ واقعہ مقامی وقت کے مطابق صبح چار اور پانچ کے درمیان بجے پیش آیا۔

آسکر

آسکر نے اولمپک میں سیمی فائنل تک رسائی حاصل کی تھی

پولیس کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ جمعرات کی صبح ایک 30 سالہ خاتون کو دارالحکومت کے بوشکاپ علاقے میں گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا۔

خاتون کو سر اور جسم کے اوپری حصے میں چوٹیں آئیں۔ جب پولیس موقعے پر پہنچی تو طبی عملہ وہاں موجود تھا، لیکن خاتون دم توڑ چکی تھیں۔ وقوعے سے نو ملی میٹر کا پستول برآمد کیا گیا۔

جنوبی افریقہ ان ممالک میں شامل ہے جن میں جرائم کی شرح بہت بلند ہے، اور بہت سے لوگ اپنی حفاظت کے لیے گھروں میں اسلحہ رکھتے ہیں۔

پسٹوریئس کاربن فائبر کی بنی ٹانگیں پہن کر دوڑ میں حصہ لیتے ہیں۔ پیدائشی طور پر ان کی دونوں ٹانگوں میں فبولا ہڈی نہیں تھی۔

وہ 2012 کے لندن اولمپکس میں 400 میٹر کی دوڑ میں سیمی فائنل تک پہنچے تھے۔ پیرالمپکس میں انھوں نے T44 200 میں چاندی کا تمغا، 4x100 ریلے میں سونے کا تمغا، اور T44 400 میں سونے کا تمغا جیت کر پیرالمپک ریکارڈ قائم کیا تھا۔

جنوبی افریقہ کی کھیلوں کی تنظیم اور اولمپک کمیٹی کا کہنا ہے کہ بہت سے لوگ ان سے اس بارے میں سوال پوچھ رہے ہیں لیکن وہ کوئی تبصرہ کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔