پاکستانی بیٹنگ لڑکھڑا کر سنبھلنے لگی

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 16 فروری 2013 ,‭ 13:55 GMT 18:55 PST

کیپ ٹاؤن میں ایک کانٹے کا مقابلہ جاری ہے

کیپ ٹاؤن میں پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان جاری ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن کے کھیل کے اختتام پر پاکستان کی مجموعی برتری 112 رنز کی ہو چکی ہے اور اس کے تین کھلاڑی آؤٹ ہوئے ہیں۔

تیسرے دن کے کھیل کے اختتام پر پاکستان نے تین وکٹوں کےنقصان پر ایک سو رنز بنائے ہیں۔ کپتان مصباح الحق، 36 اور اظہر علی 45 رنز پر ناٹ آؤٹ ہیں۔ پاکستان کی دوسری اننگز کا آغاز تباہ کن انداز میں ہوا اور اس کے دونوں اوپنر بغیر کوئی رنز بنائے پویلین لوٹ گئے۔ تجربہ کار بیٹسمین یونس خان چودہ رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

کلِک میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

فاسٹ بولر ڈیل سٹین نے ایک مرتبہ پاکستانی بیٹسمینوں کو پریشان کیے رکھا۔ ڈیل سٹین نے دوسری اننگز کے آغاز سے انتہائی تیز رفتار بولنگ کا مظاہرہ کیا۔

جنوبی افریقہ کی ٹیم کو اس وقت دھچکا لگا جب فاسٹ بولر مورنی مورکل پٹھے کی تکلیف میں مبتلا ہوگئے اور اپنی بولنگ جاری نہ رکھ سکے۔ اس بات کا قوی امکان ہے کہ مورنی مورکل اس ٹیسٹ میں مزید بولنگ نہیں کر پائیں گے۔

پاکستان کے کپتان مصباح الحق اور اظہر علی نے صبر اور تحمل سے بیٹنگ کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ کرکٹ ماہرین کا خیال ہے کہ اگر پاکستان نے ڈھائی سے تین سو تک رنز کر لیے تو میچ پر اس کی گرفت مضبوط ہو جائے گا۔ جنوبی افریقہ کو چوتھی اننگز میں بیٹنگ کرنی ہے اور وکٹ نے تیسرے دن کے اختتام سے ٹرن لینا شروع کر دیا ہے۔ پاکستان کے پاس سعید اجمل اور محمد حفیظ کی شکل میں ایک مضبوط سپن بولنگ اٹیک ہے۔

اس سے قبل جنوبی افریقہ کی پوری ٹیم پہلی اننگز میں تین سو چھبیس رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی اور اس طرح پاکستان کو بارہ رنز کی برتری حاصل ہوئی۔ جنوبی افریقہ کے سپنر رابن پیٹرسن نے ایک انتہائی عمدہ اننگز کھیل کر جنوبی افریقہ کو واپس میچ میں لا کھڑا کیا۔ رابن پیٹرسن نے پندرہ چوکوں کی مدد سے چوراسی رنز سکور کیے۔

پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے محمد عرفان نے عمدہ بولنگ کی اور تین وکٹیں حاصل کیں۔ فاسٹ بولر عمر گل بدقسمت رہے اور ان کی بولنگ پر دو کیچ ڈراپ ہوئے۔ پاکستان کی فیلڈنگ زیادہ معیاری نہیں تھی اور اس نے کئی مواقع پر اہم کیچ ڈراپ کیے۔

پاکستان کی جانب سے سعید اجمل نے چھ اور محمد عرفان نے تین وکٹیں جبکہ محمد حفیظ نے ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے پہلے پاکستان کی ٹیم پہلی اننگز میں تین سو اڑتیس رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

پاکستان کی جانب سے یونس خان نے سات چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے ایک سو گیارہ رنز جبکہ اسد شفیق نے چودہ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے ایک سو گیارہ رنز بنائے۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے فلینڈر نے پانچ، مورنی مورکل اور پیٹرسن نے دو دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

جمعرات کو شروع ہونے والے ٹیسٹ میچ میں جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کرنے کی دعوت دی تھی۔

تین ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز میں جنوبی افریقہ کو ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔

جوہانسبرگ میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میں جنوبی افریقہ نے پاکستان کو دو سو گیارہ رنز سے شکست دی تھی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔