سب سے عمر رسیدہ ایتھلیٹ کی آخری میراتھن

آخری وقت اشاعت:  پير 25 فروری 2013 ,‭ 00:47 GMT 05:47 PST

فوجا سنگھ نے نواسی برس کی عمر میں پہلی بار میراتھن دوڑ میں حصہ لیا تھا

دنیا میں میراتھن دوڑ میں حصہ لینے والے سب سے عمر رسیدہ ایتھلیٹ سمجھے جانے والے فوجا سنگھ نے ہانگ کانگ میں اپنے کیریئر کی آخری دوڑ میں شرکت کی ہے۔

مشرقی لندن کے علاقے الفرڈ سے تعلق رکھنے والے فوجا سنگھ کی عمر ایک سو ایک سال ہے اور انہوں نے ہانگ کانگ میں دس کلومیٹر کی دوڑ ایک گھنٹہ بتیس منٹ اور اٹھائیس سیکنڈ میں مکمل کی۔

دوڑ کے اختتام پر فوجا سنگھ کا کہنا تھا کہ ’مجھے یہ دن ہمیشہ یاد رہے گا۔ یہ مجھے بار بار یاد آتا رہے گا۔‘

فوجا سنگھ نے سنہ 2000 میں پہلی بار لندن میراتھن میں شرکت کی تھی اور اس کے بعد وہ آٹھ مرتبہ اس دوڑ میں شریک ہو چکے ہیں۔

اپنی آخری ریس کے بعد انہوں نے کہا کہ ’آج میں کچھ خوش بھی ہوں اور کچھ اداس بھی۔ خوشی اس بات کی کہ میں اپنے کھیل کے عروج پر ریٹائر ہو رہا ہوں اور غم اس بات کا ہے کہ وہ وقت آن پہنچا ہے کہ جب میں اس کھیل کا حصہ نہیں بن سکوں گا۔‘

فوجا سنگھ نے کہا کہ وہ اب میراتھن مقابلوں میں حصہ نہیں لیں گے تاہم خیراتی مقاصد کے لیے اگر ضرورت پڑی تو وہ ضرور دوڑیں گے۔

فوجا سنگھ 2011 میں اس وقت دنیا کے سب سے عمر رسیدہ ایتھلیٹ بن گئے تھے جب انہوں نے 100 سال کی عمر میں ٹورنٹو میراتھن میں شرکت کی تھی۔

تاہم گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ نے ان کا یہ دعویٰ ماننے سے انکار کیا تھا کیونکہ فوجا کے پاس اپنی پیدائش کا سرٹیفیکیٹ موجود نہیں۔

بھارتی پنجاب سے تعلق رکھنے والے فوجا سنگھ انیس سو ساٹھ کی دہائی میں بھارت سے برطانیہ منتقل ہوئے تھے اور انہوں نے نواسی سال کی عمر میں ریس لگانی شروع کی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔