نائب کپتان سمیت چار آسٹریلوی کرکٹر معطل

آخری وقت اشاعت:  پير 11 مارچ 2013 ,‭ 14:07 GMT 19:07 PST

آسٹریلیا نے بھارت کے خلاف تیسرے کرکٹ ٹیسٹ سے قبل چار کھلاڑیوں کو نظم و ضبط کی خلاف ورزی پر ٹیم سے معطل کر دیا ہے۔

معطل کیے جانے والے کھلاڑیوں میں نائب کپتان شین واٹسن کے علاوہ جیمز پیٹنسن، مچل جانسن اور عثمان خواجہ شامل ہیں۔

آسٹریلیا کو بھارت کے ہاتھوں ابتدائی دو ٹیسٹ میچوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے اور اب ان کھلاڑیوں کی معطلی کے بعد آسٹریلوی ٹیم کا انتخاب بقیہ تیرہ دستیاب کھلاڑیوں میں سے ہی ہوگا۔

ان چاروں کھلاڑیوں کی معطلی کی وجہ ان کی اپنی اور ٹیم کی کارکردگی میں بہتری کے لیے مانگی گئی تجاویز دینے میں ناکامی بتائی گئی ہے۔

اس معطلی کے بعد شین واٹسن دورہ چھوڑ کر واپس چلے گئے ہیں۔

پریس کانفرنس میں کھلاڑیوں کی معطلی کا اعلان کرتے ہوئے مکی آرتھر نے کہا کہ ’ہم نے ان لوگوں کو بتا دیا ہے کہ اس بارے میں مزید بات نہیں ہو سکتی۔‘

مکی آرتھر نے کہا، ’حیدرآباد ٹیسٹ کے بعد ٹیم مایوس تھی اور ہم اس صورت حال سے باہر نکلنے کے بارے میں گفتگو کر رہے تھے۔ اس گفتگو کے بعد کوچ نے تمام کھلاڑیوں سے کہا کہ وہ تین تین تجاویز دیں کہ ٹیم اور ان کی ذاتی کارکردگی کو کیسے درست کیا جائے۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’میں چاہتا تھا کہ ہر کھلاڑی تین نکات (تکنیک، ذہن اور ٹیم کے بارے) پر اپنی رائے دے لیکن یہ کھلاڑی دیے گئے وقت میں ایسا نہیں کر سکے۔‘

مکی آرتھر نے کہا کہ ٹیم میں نظم و ضبط برقرار رکھنے کے لیے ان کھلاڑیوں کو سزا دینا ضروری تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔