پنجاب یوتھ فیسٹیول میں چھ عالمی ریکارڈ

آخری وقت اشاعت:  منگل 12 مارچ 2013 ,‭ 16:40 GMT 21:40 PST

پاکستان کے صوبے پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں ہونے والے پنجاب یوتھ فیسٹیول میں گینیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کے نمائندے کی موجودگی میں پاکستانی نوجوانوں نے چھ عالمی ریکارڈ بنائے۔

ریکارڈ بنانے والوں میں کراچی سے تعلق رکھنے والے مارشل آرٹس کے ماہر محمد راشد کے دو ریکارڈ بھی شامل تھے۔

پنجاب سپورٹس بورڈ کے زیر انتظام نیشنل ہاکی سٹیڈیم لاہور میں ہونے والے اس یوتھ فیسٹیول میں پہلا ریکارڈ ہاکی بال کو ایک منٹ میں زیادہ سے زیادہ پاس کرنا تھا۔

اس سے پہلے یہ ریکارڈ کسی ملک کے پاس نہیں تھا، اسی لیے گینیز بک کی انتظامیہ نے اس کی حد مقرر کی تھی جو ایک منٹ میں کم از کم تیس پاسز کی تھی اور پاکستان کے نوجوان کھلاڑیوں نے ایک منٹ میں 43 بار گیند پاس کر کے یہ ریکارڈ بنایا۔

پاکستان کی قومی ہاکی ٹیم کے سابق کپتان محمد ثقلین کہتے ہیں کہ اس ریکارڈ میں 100 میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے آتی ہوئی گیند کو ہاکی سے روک کر پاس کرنے کے لیے کافی مہارت درکار ہوتی ہے اور پاکستانی کھلاڑیوں نے 43 پاس دے کر بہت بڑی کامیابی حاصل کی ہے۔

دوسرا ریکارڈ بھی ہاکی سے متعلق تھا جو گیند کو ’ڈربل‘ کرتے ہوئے بنا۔ کسی فاؤل کے تین منٹ میں زیادہ سے زیادہ فاصلہ طے کرنا تھا گینیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کی جانب سے آئے ہوئے نمائندے کارلوس مارٹینیز نے کہا کہ ہاکی سٹک سے گیند ’ڈربل‘ کرتے ہوئے تین منٹ میں زیادہ سے زیادہ فاصلے کا ریکارڈ 600 میٹر تھا اور پنجاب یوتھ فیسٹیول میں ہاکی ٹیم نے یہ ریکارڈ نو سو اناسی اعشاریہ 2 میٹر کا فاصلہ طے کر کے توڑ دیا۔

پنجاب یوتھ فیسٹیول میں کراچی سے آئے مارشل آرٹس کے ماہرمحمد راشد نے دو ریکارڈ توڑے۔ انہوں نے اپنے سر سے ایک منٹ میں چالیس بوتلوں کے ڈھکن کھولنے کا ریکارڈ بنایا اس سے پہلے یہ ریکارڈ جرمنی کے احمد افزی کا تھا جنہوں نے 24 ڈھکن کھولے تھے۔

"اس ریکارڈ میں 100 میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے آتی ہوئی گیند کو ہاکی سے روک کر پاس کرنے کے لیے کافی مہارت درکار ہوتی ہے اور پاکستانی کھلاڑیوں نے 43 پاس دے کر بہت بڑی کامیابی حاصل کی ہے۔"

پاکستان کی قومی ہاکی ٹیم کے سابق کپتان محمد ثقلین

محمد راشد کئی سال سے عالمی ریکارڈ بنانے کی خواہش رکھتے تھے اور اس کے لیے انہوں نے تین ماہ تک سخت محنت کی۔

محمد راشد نے ایک منٹ میں کک مار کر پچاس ناریل گرا کر ایک اور ریکارڈ توڑا جو جرمنی کے احمد افزی ہی کا تھا۔

واجد اور عتیق نے ایک منٹ میں بید منٹن کی 123 شاٹس کی ریلی کر کے جرمنی کا ریکارڈ توڑ دیا۔

لاہور کے امین سلیم نے سلمے ستارے سے چھ اعشاریہ دو مربع میٹر کی تصویر بنا کر ہنگری میں بنا ریکارڈ توڑ دیا۔

پنجاب یوتھ فیسٹیول میں منگل کو نو ریکارڈ بنائے جانے تھے لیکن تاخیر کے سبب آج چھ ریکارڈ بنے اور باقی تین کے لیے کل کوشش ہو گی۔

پاکستان کے آل راؤنڈر رانا نوید الحسن بھی کل ایک منٹ میں زیادہ سے زیادہ گیندیں کھیلنے کا عالمی ریکارڈ توڑنے کی کوشش کریں گے۔ موجودہ ریکارڈ انگلینڈ کے اینڈریو فلینٹوف کا ہے جنہوں نے مارچ 2012 میں اوول میں ایک منٹ میں انیس گیندیں کھیلیں۔

گزشتہ سال اکتوبر میں بھی لاہور میں ہونے والے یوتھ فیسٹیول میں گیارہ ورلڈ ریکارڈ بنائے گئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔