موہالی: شیکھر دھون کی شاندار سنچری

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 16 مارچ 2013 ,‭ 11:34 GMT 16:34 PST

جب کھیل ختم ہوا تو شیکھر 185 اور مرلی 83 رنز پر ناٹ آؤٹ تھے

بھارت نے آسٹریلیا کے خلاف تیسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن شیکھر دھون اور مرلی وجے کی عمدہ بلے بازی کی بدولت پہلی اننگز میں بغیر کسی نقصان کے 283 رنز بنا لیے ہیں۔

اس طرح بھارت کو آسٹریلیا کی پہلی اننگز کی برتری ختم کرنے کے لیے مزید 125 رنز درکار ہیں اور اس کی تمام وکٹیں باقی ہیں۔

موہالی میں کھیلے جانے والے میچ میں شیکھر دھون نے اپنے پہلے ہی ٹیسٹ میں چھیاسی گیندوں پر سنچری بنا کر کیریئر کے افتتاحی میچ میں تیز ترین سنچری کا نیا عالمی ریکارڈ قائم کر دیا۔

ان کا ساتھ دینے والے مرلی وجے نے نصف سنچری مکمل کی۔ جب کھیل ختم ہوا تو شیکھر 185 اور مرلی 83 رنز پر ناٹ آؤٹ تھے۔

اس سے قبل اختتامی بلے بازوں کی عمدہ کارکردگی کی بدولت آسٹریلوی ٹیم پہلی اننگز میں 408 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔

سنیچر کو آسٹریلیا نے سات وکٹوں پر 273 رنز سے اننگز دوبارہ شروع کی تو ایسا لگ رہا تھا کہ بھارتی بولرز جلد ہی یہ بساط سمیٹ دیں گے تاہم سٹیون سمتھ اور مچل سٹارک کی عمدہ بلے بازی نے آسٹریلیا کا سکور 408 رنز تک پہنچانے میں مدد دی۔

ان دونوں بلے بازوں نے آٹھویں وکٹ کے لیے 97 رنز کی شراکت قائم کی۔

سٹارک صرف ایک رن کی کمی سے سنچری مکمل نہ کر سکے اور ایشانت شرما کا تیسرا شکار بنے جبکہ سمتھ بھی 92 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

بھارت کی جانب سے ایشانت شرما اور رویندر جدیجہ نے تین، تین جبکہ پرگیان اوجھا اور روی چندرن ایشون نے دو، دو وکٹیں لیں۔

اب تک چار میچوں کی اس ٹیسٹ سیریز میں بھارت کو دو صفر کی برتری حاصل ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔