ویسٹ انڈیز کی دو وکٹوں سے جیت

Image caption مصباح الحق چار رن کی کمی سے ایک روزہ کرکٹ میں اپنی پہلی سنچری مکمل نہ کر سکے

انگلینڈ اور ویلز میں منعقد ہونے والی آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کے گروپ بی کے دوسرے میچ میں پاکستان کے خلاف 171 رنز کے ہدف کے تعاقب میں ویسٹ انڈیز نے ہدف آٹھ وکٹوں کے نقصان پر بنا لیا۔

اوول میں کھیلے جانے والے اس میچ میں پاکستان نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 170 رنز سکور کیے تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان بمقابلہ ویسٹ انڈیز: تصاویر میں

ویسٹ انڈیز کی جانب سے کرس گیل نے 39 رنز سکور کیے جبکہ سیمیول اور پولارڈ نے تیس تیس رنز بنائے۔

پاکستان کی جانب سے محمد عرفان نے تین، سعید اجمل اور وہاب ریاض نے دو دو اور محمد حفیظ نے ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے قبل ویسٹ انڈیز نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے بیٹنگ کرنے کی دعوت دی تو پاکستانی ٹیم پورے پچاس اوور بھی نہ کھیل سکی اور اڑتالیسویں اوور میں 170 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

پاکستانی ٹیم اننگز کی ابتدا سے ہی مشکلات کا شکار رہی اور اس کے 3 کھلاڑی صرف 15 کے مجموعی سکور پر آؤٹ ہو گئے تھے۔

اس موقع پر کپتان مصباح الحق اور ناصر جمشید نے محتاط انداز میں بلے بازی کی اور سست روی سے کھیلتے ہوئے سکور 105 رنز تک پہنچا دیا۔ ان دونوں کے درمیان 90 رنز کی شراکت ہوئی۔

اس دوران ناصر جمشید اور مصباح الحق نے نصف سنچریاں بھی مکمل کیں۔ ناصر جمشید تو پچاس رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے جبکہ مصباح اننگز کے آخر تک جمے رہے اور آخری وکٹ کے لیے محمد عرفان کے ساتھ 32 رنز کی اہم شراکت قائم کی۔

مصباح الحق چار رن کی کمی سے ایک روزہ کرکٹ میں اپنی پہلی سنچری مکمل نہ کر سکے اور پانچ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 96 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

Image caption کیمار روچ نے پاکستانی بلے بازوں کو پریشان کیے رکھا

مصباح اور ناصر کے علاوہ کسی بھی پاکستانی بلے باز کا سکور دوہرے ہندسوں تک نہ پہنچ سکا اور تین کھلاڑی بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے۔

ویسٹ انڈیز کی جانب سے کیمار روچ اور سنیل نرائن نے تین، تین وکٹیں لیں جبکہ ڈوین براوو نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا جبکہ دو کھلاڑی رن آوٹ ہوئے۔

پاکستان اب تک آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی ٹورنامنٹ جیتنے میں ناکام رہا ہے جبکہ ویسٹ انڈیز نے 2004 میں یہ ٹورنامنٹ جیتا تھا۔

آئی سی سی کے مطابق یہ چیمپیئنز ٹرافی کا آخری مقابلہ ہے اور اس کے بعد وہ اس قسم کا ٹورنامنٹ کرانے کا ارادہ نہیں رکھتی۔ انگلینڈ اور ویلز میں چھ جون سے شروع ہو کر 18 دن تک چلنے والے اس ٹورنامنٹ میں دنیا کی آٹھ بہترین ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔

گروپ اے میں انگلینڈ کے علاوہ آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور سری لنکا کی ٹیمیں شامل ہیں جب کہ گروپ بی میں بھارت، پاکستان، جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز کی ٹیمیں نبرد آزما ہوں گی۔

پاکستان کی ٹیم

عمران فرحت، ناصر جمشید، محمد حفیظ، اسد شفیق، مصباح الحق، شعیب ملک، کامران اکمل، وہاب ریاض، سعید اجمل، جنید خان اور محمد عرفان

ویسٹ انڈیز کی ٹیم

کرس گیل، جانسن چارلس، ڈوین براوو، رام نریش ساروان، کیرن پولارڈ، ڈوین براوو، مارلن سیموئلز، دنیش رام دین، سنیل نارائن، روی رام پال اور کیمار روچ

اسی بارے میں