غلط اپیل پر رام دین پر 2 میچوں کی پابندی

Image caption رام دین پر یہ الزام پاکستان کے کپتان مصباح الحق کے خلاف کیچ کی غلط اپیل کرنے پر لگایا گیا

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے پاکستان کے خلاف میچ میں غلط اپیل کرنے پر ویسٹ انڈین وکٹ کیپر دنیش رام دین پر دو ون ڈے میچوں کی پابندی عائد کر دی ہے۔

انہیں اپنی مکمل میچ فیس بطور جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگی۔

آئی سی سی کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق دنیش رام دین لندن میں جمعہ کو پاکستان کے خلاف میچ کے دوران آئی سی سی کے ضابطۂ اخلاق کی لیول 2 کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے تھے۔

وکٹ کیپر رام دین پر یہ الزام پاکستان کے کپتان مصباح الحق کے خلاف کیچ کی غلط اپیل کرنے پر لگایا گیا ہے۔ امپائر نے ابتدائی طور پر مصباح کو اس اپیل کے نتیجے میں آؤٹ قرار دیا لیکن دوبارہ جائزہ لینے پر پتا چلا کہ رام دین گیند پکڑنے میں ہی ناکام رہے تھے۔

رام دین کے خلاف یہ شکایت میچ کے آن اور آف فیلڈ امپائروں نے درج کروائی تھی تاہم انہوں نے اسے تسلیم نہیں کیا تھا اور اس معاملے کی سنوائی پیر کو ہونا طے ہوئی تھی۔

آئی سی سی کے بیان میں کہا گیا ہے کہ پیر کو کرس براڈ کی سربراہی میں آئی سی سی کی کمیٹی نے رام دین کے رویے کو کھیل کی روح کے منافی قرار دیا اور انہیں سزا سنا دی۔

خیال رہے کہ مصباح الحق نے بھی میچ کے بعد دنیش رام دین کی اس حرکت پر ناپسندیدگی کا اظہار کیا تھا۔

انہوں نے کہا تھا کہ ’اگر آپ کو یقین نہیں کہ یہ کیچ ہے پھر تو بات اور ہے لیکن جب آپ جانتے ہیں کہ کیچ نہیں ہوا پھر آؤٹ کرنے کا دعوٰی کرنا کھیل کی روح کے خلاف ہے۔‘

اسی بارے میں