ایشز: دلچسپ مقابلے کے بعد انگلینڈ جیت گیا

ناٹنگھم میں کھیلے جانے والے پہلے ایشز ٹیسٹ کے آخری دن ایک دلچسپ مقابلے کے بعد انگلینڈ نے آسٹریلیا کو چودہ رنز سے شکست دے دی ہے۔

چوتھے روز کھیل کے اختتام پر آسٹریلیا نے اپنی دوسری اننگز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 174 رنز بنا لیے تھے۔

اتوار کو ایک موقع پر آسٹریلیا کے دو سو اکتیس پر نو کھلاڑی آؤٹ ہو چکے تھے اور اسے فتح کے لیے مزید اسی رنز درکار تھے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

آسٹریلیا کے بریڈ ہیڈن اور پیٹنسن کے دوران 65 رنز کی شراکت داری ہوئی اور دونوں نے مجموعی سکور کو 296 تک پہنچا دیا لیکن بریڈ ہیڈن 71 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ وہ اننگ کے ٹاپ سکورر رہے۔

آسٹریلیا کی ساری ٹیم 296 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔ انگلینڈ کے اینڈرسن نے پانچ وکٹیں حاصل کیں۔

سنیچر کو آسٹریلیا کی دوسری اننگز کی خاص بات اوپنرز کا عمدہ آغاز تھا۔

شین واٹسن اور کرس راجرز نے پہلی وکٹ کی شراکت میں 84 رنز بنائے اور اس شراکت کا خاتمہ شین واٹسن کے 46 رنز بنا کر آؤٹ ہونے پر ہوا۔

111 کے مجموعی سکور پر آسٹریلیا کو دوسرا نقصان اس وقت اٹھا پڑا جب ایڈورڈ کوون 14 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔ 13 رنز بعد راجرز بھی نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد جیمز اینڈرسن کا شکار بنے۔

بعد میں آنے والے بلے بازوں میں کوئی بھی جم کر نہ کھیلا اور کلارک 23، سمتھ 17 اور فل ہیوز بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے۔

انگلینڈ کی جانب سے دوسری اننگز میں سٹورٹ براڈ اور گریم سوان نے دو، دو جبکہ جوائے روٹ اور جیمز اینڈرسن نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

اس سے پہلے انگلینڈ کی ٹیم دوسری اننگز میں 375 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی اور اس نے آسٹریلیا کو جیتنے کے لیے 311 رنز کا ہدف دیا تھا۔

انگلینڈ کی دوسری اننگز کی خاص بات این بیل اور سٹورٹ براڈ کی عمدہ بلے بازی تھی۔ دونوں بلے بازوں نے ساتویں وکٹ کے لیے 138 رنز کی شراکت قائم کی۔

انگلینڈ کی جانب سے این بیل نے 15 چوکوں کی مدد سے 109 جبکہ سٹورٹ براڈ نے 7 چوکوں کی مدد سے 65 رنز بنائے۔

بدھ کو شروع ہونے والے میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور پہلی اننگز میں 215 رنز بنائے تھے۔

اس کے جواب میں آسٹریلیا نے ایشٹن اگر اور فل ہیوز کی ریکارڈ شراکت کی بدولت اپنی پہلی اننگز میں 280 رنز بنائے تھے اور اسے انگلینڈ پر 65 رنز کی برتری حاصل ہوئی تھی۔

اسی بارے میں