یوسین بولٹ نے 200 میٹر دوڑ جیت لی

Image caption یوسین بولٹ نے 19.66 سیکنڈز میں یہ کارنامہ انجام دیا

یوسین بولٹ نے روس کے دارالحکومت ماسکو میں 200 میٹر دوڑ میں طلائی کا تمغہ جیت کر اپنے اعزاز کا کامیابی سے دفاع کر لیا۔

جمیکا سے تعلق رکھنے والے یوسین بولٹ کا عالمی چیمپیئن شپ میں یہ ساتواں تمغہ ہے۔

یوسین بولٹ نے 19.66 سیکنڈز میں یہ کارنامہ انجام دیا اور لگاتار تیسری بار 200 میٹر کی دوڑ جیتی۔

اس مقابلے میں وارن ویئر نے اپنی بہترین کاررکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 19.79 سیکنڈز میں چاندی جبکہ امریکہ کے کرٹس مشیل نے 20.04 سیکنڈز کانسے کا تمغہ جیتا۔

خیال رہےکہ یوسین بولٹ نے برلن میں اسی فاصلے کو 19.19 سیکنڈ میں عبور کر کے عالمی ریکارڈ قائم کیا تھا۔

اگر يوسین بولٹ اتوار کو ہونے والی 4 ضرب 100 میٹر ریلے ریس کے فائنل میں فتح حاصل کر لیتے ہیں تو وہ عالمی چیمپئن شپ میں سب سے زیادہ طلائی تمغے جیتنے والے امریکیوں میں شامل ہو جائیں گے۔

امریکہ کے کارل لیوس، مچل جانسن اور ایلیسن فیلکس نے اب تک آٹھ آٹھ طلائی تمغے جیتے ہیں۔

یوسین بولٹ نے دوڑ کی جیت کے بعد کہا ’100 میٹر کی دوڑ مداحوں کے لیے ہے اور یہ دکھانے کے لیے ہے کہ میں دنیا کا تیز ترین آدمی ہوں لیکن میرے لیے یہ انتہائی اہم ہے کہ میں یہاں اپنے 200 میٹر دوڑ کے اعزاز کا دفاع کر پایا‘۔

انھوں نے مذید کہا’جب میں ٹریک پر اترا تو میں تھکاوٹ محسوس کر رہا تھا۔ میرے قدم قدرے وزنی لگ رہے تھے اور میرے کوچ نے کہا تھا کہ اگر ممکن ہو تو میں جان کی بازی نہ لگاؤں اسی لیے میں نے ذرا کم کوشش کی‘۔

بولٹ نے سات طلائی تمغوں کے علاوہ چاندی کے دو تمخے بھی جیتے ہیں اور اگر وہ ریلے دوڑ میں بھی کامیابی حاصل کرتے ہیں تو وہ کل 10 تمغے جیتنے والے لیوس اور فیلکس کی برابر آ جائیں گے۔

اسی بارے میں