ہرارے ٹیسٹ: پاکستان کی 221 رنز سے جیت

Image caption یونس خان نے 15 چوکوں اور 3 چھکوں کی مدد سے 200 رنز اور آؤٹ نہیں ہوئے

ہرارے میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے زمبابوے کو دو سو اکیس رنز سے شکست دے کر دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں برتری حاصل کر لی ہے۔

زمبابوے کو یہ میچ جیتنے کے لیے مجموعی طور پر تین سو انتیس رنز کی ضرورت تھی اور دوسری اننگز میں اس کی پوری ٹیم صرف ایک سو بیس رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

پاکستان کی طرف سے عبدالرحمٰن اور سعید اجمل نے اہم کردار ادا کیا۔ پاکستان کے سپنرز سیعد اجمل اور عبدالرحمٰن نے چار چار وکٹیں حاصل کیں۔ عبدالرحمٰن نے بتیس رنز دیے جبکہ سیعد اجمل نے تئیس رنز دیے۔ جنید خان نے دس رن دے کر دو کھلاڑی آؤٹ کیے۔

زمبابوے کی جانب سے ٹینو مویو اور سیباندہ نے دوسری اننگز آغاز کیا۔

زمبابوے کی دوسری اننگز کا آغاز اچھا نہ تھا اور صرف تیرہ رنز کے مجموعی سکور پر ٹینو مویو دو رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔

اس کے بعد زمبابوے کی وکٹیں زرد پتوں کی طرح گرتی چلی گئیں۔

تیرہ رنز کے مجموعی سکور پر پہلی ووکٹ گری۔ اس کے بعد دوسری چودہ رن پر، تیسری انیس، چوتھی انچاس، پانچویں اٹھاون، چھٹی نواسی، ساتویں اور آٹھویں نوے اور نویں ایک سو ایک رنز پر گری۔

جس ٹیم نے پہلی اننگز پر پاکستان پر اٹھہتر رنز کی برتری حاصل کر لی تھی دوسری اننگز میں ایک سو ایک رنز پر نو وکٹیں کھو بیٹھی۔

اس سے پہلے پاکستان نے نو وکٹوں کے نقصان پر چار سو انیس رنز بنا کر دوسری اننگز ڈکلئیر کر دی اور زمبابوے کے جیتنے کے لیے 342 رنز کا ہدف دیا۔

پاکستان کی دوسری اننگز کی خاص بات یونس خان نے شاندار ڈبل سنچری تھی۔ یونس خان نے پندرہ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے دو سو رنز اور آؤٹ نہیں ہوئے۔

زمبابوے کی جانب سے دوسری اننگز میں اوٹسیانے تین، پینیگیرا اور چتارا نے دو دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

جمعہ کو زمبابوے نے سات وکٹوں کے نقصان پر 281 رنز سے اپنی پہلی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا اور اس کی پوری ٹیم 327 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

زمبابوے کی جانب سے میلکم والر سب سے زیادہ 70، سکندر رضا نے 60 اور چیگمبورا نے 69 رنز بنائے۔

پاکستان کی جانب سے پہلی اننگز میں سعید اجمل نے 7 اور جنید خان نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔

پاکستان زمبابوے کے دورے میں تین ایک روزہ میچوں کی سیریز دو ایک سے جبکہ دو ٹی ٹوئنٹی میچوں کی سیریز دو صفر سے جیت چکا ہے۔

اسی بارے میں