آسٹریلیا نے آخری ون ڈے اور سیریز جیت لی

Image caption آسٹریلوی ٹیم نے اس دورے میں ایشز میں شکست اور ایک روزہ سیریز میں کامیابی حاصل کی

آسٹریلیا نے انگلینڈ کو نیٹ ویسٹ سیریز کے پانچویں اور آخری ایک روزہ میچ 49 رنز سے ہرا کر سیریز دو ایک سے اپنے نام کر لی ہے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

ساؤتھمپٹن میں کھیلے گئے میچ میں ٹاس جیت کر آسٹریلیا نے انگلینڈ کو کامیابی کے لیے دو سو ننانوے رنز کا ہدف دیا تھا جس کے تعاقب میں میزبان ٹیم دو سو انچاس رنز بنا کر آوٹ ہوگئی۔

آسٹریلیا کی جانب سے بہترین بلے باز اور مین آف دی میچ شین واٹسن نے ایک سو سات گیندوں پر چھ چھکوں اور بارہ چوکوں کی مدد سے ایک سو تینتالیس رنز بنائے۔

ان کے علاوہ کپتان مائیکل کلارک پچھہتر رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ وہ اس سیریز کے بہترین کھلاڑی بھی قرار پائے۔

انگلینڈ کی جانب سے کامیاب ترین بالر بن سٹوکس رہے جنہوں نے دس اووروں میں اکسٹھ رنز کے عوض پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ اپنا پہلا بین الاقوامی ایک روزہ میچ کھیل رہے کرس جورڈن نے تین وکٹیں لیں۔

Image caption شین واٹسن نے ایک سو سات گیندوں پر چھ چھکوں اور بارہ چوکوں کی مدد سے ایک سو تینتالیس رنز بنائے

انگلینڈ کی بیٹنگ کا آغاز کچھ اچھا نہ تھا اور پہلے ہی اوور میں کیون پیٹرسن کوئی رن بنائے بغیر ہی رن آوٹ ہوگئے۔

انگلینڈ کے کامیاب ترین بلے باز روی بوپارا رہے جنہوں نے باسٹھ رنز بنائے۔

آسٹریلیا نے یہ سیریز ایک کے مقابلے میں دو میچوں میں کامیابی حاصل کر کے جیتی ہے۔

پانچ میچوں کی اس سیریز کا پہلا اور تیسرا میچ بے نتیجہ رہا تھا جبکہ دوسرے میچ میں آسٹریلیا نے 88 رنز سے فتح حاصل کی تھی جبکہ چوتھے ایک روزہ میچ میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کو تین وکٹوں سے شکست دے دی تھی۔

یاد رہے کہ آسٹریلیا کے برطانیہ کے اس دورے پر انہیں ایشز ٹیسٹ سیریز میں تین صفر سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

اسی بارے میں